The news is by your side.

Advertisement

‘پہلی بار اصلی صدر اور اصلی گورنر پنجاب سے پالا پڑا، انکی بلند چیخیں بنتی ہیں’

پاکستان تحریک انصاف کے رہنما شہباز گل نے کہا ہے کہ صدر اور گورنر کے عہدے رسمی یا ڈاکیے نہیں، پہلی بار اصلی صدر اور اصلی گورنر پنجاب سے پالا پڑا اسلیے ان کی بلند چیخیں تو بنتی ہیں۔

پی ٹی آئی رہنما شہباز گل نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹوئٹ میں کہا ہے کہ صدر اور گورنر کے عہدے رسمی یا ڈاکیے نہیں ہیں ان کا پہلی بار اصلی صدر اور اصلی گورنر پنجاب سے پالا پڑا ہے اس لیے انکی بلند چیخیں بنتی ہیں۔

شہباز گل نے اپنے ٹوئٹ میں مزید کہا کہ صدر اور گورنر کو آئین کے تحت اختیارات کے ساتھ استثنیٰ بھی حاصل ہے، یہی وجہ ہے ن لیگ نے ان عہدوں پر اپنے خدمت گزاروں کو رکھا اور انہوں نے اپنی حیثیت کے مطابق انہوں نے صرف ڈاکیے کا کردار ادا کیا ہے۔

پی ٹی آئی رہنما نے اپنے ایک اور ٹوئٹ میں وزیراعلیٰ پنجاب حمزہ شہباز پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ حمزہ المعروف ککڑی غیر قانونی طور پر منتخب خود ساختہ وزیراعلیٰ ہے جس کی کابینہ تک موجود نہیں ہے، ہر منطق سے اسے منی لانڈرنگ کے جرم میں جیل میں ہونا چاہیے تھا آج اسکی ساری بے سروپا باتیں اس کی فرسٹریشن ظاہر کر رہی ہیں۔

شہباز گل نے اپنے ایک اور ٹوئٹ میں اپنے پارٹی قائد عمران خان کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ مشکل ترین حالات میں عمران خان سخت فیصلے لے رہے تھے، پاکستانی عوام نے بھی عمران خان کا ساتھ دیا اور عوم نے بڑھتی ہوئی قیمتوں کے عالمی اثرات کو برداشت کیا۔

پی ٹی آئی رہنما نے یہ بھی کہا کہ امپورٹڈ حکومت کے پاس سیاسی سرمایہ ہے نہ قائدانہ معیار بلکہ امپورٹڈ حکومت کا واحد ہنر لوٹ مار ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں