The news is by your side.

Advertisement

شرمیلا فاروقی دو ہزار اکیس تک کسی بھی عہدے کیلئے نا اہل ہیں، نیب

کراچی : وزیراعلیٰ سندھ کی مشیر شرمیلا فاروقی کسی بھی سرکاری عہدے کیلئے نااہل ہیں، نیب نے چیئرمین سیکریٹریٹ کو خط لکھ دیا۔

تفصیلات کے مطابق پیپلزپارٹی کی رہنماءشرمیلا فاروقی کی سیاست بھی خطرے میں پڑگئی، قومی احتساب بیورو نے کہا ہے کہ شرمیلا فاروقی دو ہزار اکیس تک کسی بھی عہدے کیلئے نا اہل ہیں۔

پری بارگیننگ میں سزا یافتہ ہونے کے باوجود شرمیلا فاروقی وزیراعلیٰ کی مشیر پھر رکن سندھ اسمبلی اور پھر صوبائی وزیر رہیں۔ لیکن نیب خاموش رہا، پھر اچانک نیب جاگ اٹھا۔ 3 جون کو چیئرمین سیکریٹریٹ کو شرمیلا فاروقی کی نااہلی کا خط لکھ دیا۔

خط کے مطابق پلی بار گیننگ کے تحت شرمیلا فاروقی کو اکیس سال کیلئے نااہل قرار دیا گیا تھا، اسٹیل مل ریفرنس نمبر تین میں شرمیلا فاروقی اور ان کے اہل خانہ کودو ہزار ایک میں پلی بارگیننگ کی اکیس سال کی سزا سنائی گئی تھی۔

خط میں لکھا گیا ہے کہ پلی بارگیننگ کی سزا کم کرکے دس سال ہونے کی ترمیم شرمیلا فاروقی پر لاگو نہیں ہوتی،یہ ترمیم شرمیلا فاروقی کی سزا کے چار ماہ بعد کی گئی تھی۔

شرمیلا فاروقی مارچ دو ہزار دس میں مشیر اوردو ہزار تیرہ میں رکن سندھ اسمبلی اور صوبائی وزیر رہی ہیں ،نیب عدالت کی سزا کے بعد شرمیلا فاروقی دو ہزار اکیس تک نااہل ہیں۔

نیب کے خط کے مطابق شرمیلا فاروقی چھ سال سے عہدوں پربراجمان ہیں ، وہ 2021ءتک نیب کے فیصلے کی روشنی میں قانونی طورپر نااہل ہیں اور گزشتہ 6سال سے لی گئی مراعات بھی غیرقانونی ہیں۔

یہ سوال بھی اٹھایا گیا کہ مراعات اور سرکاری فیصلوں کی کیا قانونی حیثیت ہوگی؟ نیب کا کہنا ہے کہ الیکشن کمیشن اور سندھ حکومت نے نیب عدالت کے فیصلے کی خلاف ورزی کی۔

 

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں