The news is by your side.

Advertisement

شیخ رشید نے مچھ واقعے پر رپورٹ وزیراعظم کو پیش کردی

اسلام آباد : وفاقی وزیرداخلہ شیخ رشید نے مچھ واقعے پر رپورٹ وزیراعظم عمران خان کو پیش کردی، شیخ رشید نے کہا کہ ہزارہ برادری کونشانہ بنانے میں بین الاقوامی قوتیں ملوث ہیں۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان سے وزیرداخلہ شیخ رشید کی ملاقات ہوئی ، جس میں کوئٹہ میں جاری دھرنےکے حوالےسے اہم گفتگو کی گئی۔

ملاقات میں شیخ رشید نے کوئٹہ واقعے پر وزیراعظم کو رپورٹ پیش کی اور اس حوالے پریس کانفرنس طلب کرلی۔

بعد ازاں وزیرداخلہ شیخ رشید نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم کی ہدایت پر کوئٹہ گیا تھا، ہزارہ برادری کو پچھلے کئی سالوں سے نشانہ بنایاجارہاہے، چند ماہ میں 4گروہ پکڑے ہیں فرقہ ورانہ واقعات کراناچاہتےتھے۔

وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ مچھ واقعے کی جتنی مذمت کی جائے کم ہے، ایسےواقعات میں عالمی قوتیں ملوث ہیں، ہزارہ برادری کونشانہ بنانے میں بین الاقوامی قوتیں ملوث ہیں۔

شیخ رشید نے بتایا کہ دھرنا مظاہرین کے تمام مطالبات تسلیم کئے ، وزیراعظم کو رپورٹ دی، کچھ عناصر نہیں سمجھ رہے کہ سیاست کیلئے بڑا وقت پڑا ہے، افسوس کی بات ہے بعض لوگ سمجھ نہیں رہے ہیں ۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم ہزارہ قبیلے سے خاص ہمدردی رکھتے ہیں، علی زیدی اور زلفی بخاری کوئٹہ میں موجود ہیں، امید ہے تمام معاملات خوش اسلوبی سے طے ہوجائیں گے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ ایف سی کو علاقےمیں بڑےپیمانے پر سرچ آپریشن کاکہہ چکا ہوں، آج ہی تدفین ہوجائے تووزیراعظم آج شام ہی کوئٹہ جانے کو تیار ہیں، اسکالرز اورعلمائے کرام سے بھی تعاون مانگا ہے۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ پاکستان میں دہشت گردی کی نئی لہر ہے ، اسلام آباد،لاہور،کوئٹہ ،پشاور ہائی الرٹ ہیں، بھارتی را ایجنٹ اور پے رول پر کام کرنیوالوں کے تھریٹس ہیں، دہشت گردی کے خطرے کے پیش نظر اداروں کواطلاع دی ہے۔

انھوں نے مزید کہا کہ ڈی پی او،ڈی سی سمیت پوری انتظامیہ کو معطل کیاجاچکاہے، مچھ واقعے سے کچھ دنوں پہلے فوجی جوانوں کو بھی شہید کیاگیا،۔ جاں بحق7افغانیوں کو بھی انتا ہی معاوضہ دیا جائےگاجنتاکہ پاکستانیوں کو دیا جائے گا۔

وزیراعظم کے کوئٹہ دورے کے حوالے سے وزیر داخلہ کا کہنا تھا کہ عمران خان کےجانےمیں تاخیرکی بہت سی وجوہات ہیں جوبتائی نہیں جا سکتیں، بہت سے واقعات ایسے جن سے مختلف طریقوں سے جان چھڑائی جاتی ہے ، وزیراعظم کی یہ شرط نہیں ،کئی معاملات ہیں میڈیا پر نہیں لائے جاسکتے، وزیراعظم جارہے ہیں وہ جائیں گے اورکسی بھی جاسکتے ہیں، بہتر طریقے سے جانا بھی جستجو ہے۔

شیخ رشید نے کہا کہ کس گروہ نے کیا،داعش کےعلاوہ اور لوگوں نے بھی نام لیا ہے، دھرنےوالوں کاایک مطالبہ بلوچستان حکومت کاخاتمہ تھاجومیرے ہاتھ میں نہیں تھا، نہیں چاہتاان طاقتوں کوفائدہ پہنچےجوشعیہ،سنی فرقہ واریت پیداکرناچاہتےہیں ، تدفین ہوجائے،عمران خان کی حد تک مسئلہ ایک گھنٹے میں ہوجائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں