تازہ ترین

فیض آباد دھرنا : انکوائری کمیشن نے فیض حمید کو کلین چٹ دے دی

پشاور : فیض آباد دھرنا انکوائری کمیشن کی رپورٹ...

حکومت نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کردیا

حکومت کی جانب سے پیٹرولیم مصنوعات کی نئی قیمتوں...

سعودی وزیر خارجہ کی قیادت میں اعلیٰ سطح کا وفد پاکستان پہنچ گیا

اسلام آباد: سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان...

حکومت کل سے پٹرول مزید کتنا مہنگا کرنے جارہی ہے؟ عوام کے لئے بڑی خبر

راولپنڈی : پیٹرول کی قیمت میں اضافے کا امکان...

نئے قرض کیلئے مذاکرات، آئی ایم ایف نے پاکستان کے لیے خطرے کی گھنٹی بجادی

واشنگٹن : آئی ایم ایف کی منیجنگ ڈائریکٹر کرسٹیلینا...

بارشوں کے سبب بڑے شہروں میں اربن فلڈنگ، پہاڑی علاقوں میں لینڈ سلائیڈنگ کا خدشہ

وفاقی وزیر برائے ماحولیات شیری رحمان نے کہا ہے کہ بڑے شہروں میں اربن فلڈنگ اور پہاڑی علاقوں میں لینڈ سلائیڈنگ کا امکان ہے، مختلف شہروں میں 24 سے 48 گھنٹے میں گرج چمک کے ساتھ بارش ہو سکتی ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق شیری رحمان نے کہا ہے کہ بڑے شہروں میں اربن فلڈنگ اور پہاڑی علاقوں میں لینڈ سلائیڈنگ کا امکان ہے جب کہ لاہور، سیالکوٹ اور نارووال میں موسلادھار بارش کی توقع کی جارہی ہے۔

مختلف شہروں میں 24 سے 48 گھنٹے میں گرج چمک کے ساتھ بارش ہو سکتی ہے، سندھ، شمال مشرقی بلوچستان اور کے پی کے مختلف شہروں میں بھی بارش کا امکان ہے۔

وفاقی وزیر برائے ماحولیات کے مطابق دریائے چناب، راوی، ستلج میں بھی درمیانے درجے سے اونچے درجے کا سیلاب متوقع ہے،انتظامیہ شہری مراکزمیں سیلاب کے خطرے سے دوچارعلاقوں کے لیے ہنگامی ٹریفک پلان یقینی بنائے۔

شیری رحمان نے اپنی ٹوئٹ میں کہا کہ سیلاب زدہ انڈرپاسز کے لیے فوری طور پر ڈی واٹرنگ آپریشن شامل ہونا چاہیے، شیری رحمان نے بتایا کہ 25 جون سے اب تک بارشوں کے مختلف واقعات میں 68 اموات اور 79 مکانات کو نقصان پہنچا، شہریوں اور سیاحوں سے درخواست کی جاتی ہے کہ وہ ہدایات پر عمل کریں اور احتیاط برتیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ضلعی انتظامیہ کو دریا کے آس پاس کے علاقوں میں پیشگی تیاری اور فوری ردعمل یقینی بنانا چاہیے، متعلقہ اداروں اور اسٹیک ہولڈرز کو فوری تعاون کو یقینی بنانے کے لیے فعال رابطہ برقرار رکھنا چاہیے۔

Comments

- Advertisement -