The news is by your side.

جنیوا میں سیلاب متاثرین کے لیے امداد کی اپیل کی تقریب

جنیوا: وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی شیری رحمٰن نے فلیش اپیل کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں ہنگامی بنیادوں پر ادویات اور طبی سہولیات کی ضرورت ہے، موسم سرما آنے والا ہے، متاثرین کو سردی سے بچانے کے لیے اقدامات کرنا ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے موسمیاتی تبدیلی شیری رحمٰن نے جنیوا میں فلیش اپیل کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ موسمیاتی تبدیلی میں پاکستان کا حصہ ایک فیصد سے بھی کم ہے، اس کے اثرات پر ترقی یافتہ ملکوں کی ذمہ داری زیادہ ہے۔

وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ دنیا کو موسمیاتی چیلنجز کا سامنا ہے، دور جدید کے مختلف چیلنجز میں موسمیاتی تبدیلی ایک بہت بڑا چیلنج ہے، اس سے پاکستان بری طرح متاثر ہوا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حالیہ سیلاب موسمیاتی تبدیلی کی ایک واضح مثال ہے، حکومت سیلاب متاثرین کی بحالی کے لیے اقدامات کر رہی ہے، بارش اور سیلاب سے زراعت اور بنیادی ڈھانچے کو شدید نقصان پہنچا ہے۔

شیری رحمٰن کا کہنا تھا کہ وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ اب بھی کئی علاقوں میں سیلابی پانی کھڑا ہے، ہمیں ہنگامی بنیادوں پر ادویات اور طبی سہولیات کی ضرورت ہے، موسم سرما آنے والا ہے، متاثرین کو سردی سے بچانے کے لیے اقدامات کرنا ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں