جج کے بیٹے کو قتل کرنے کا الزام ثابت: سابق جج سکندر لاشاری کو موت کی سزا -
The news is by your side.

Advertisement

جج کے بیٹے کو قتل کرنے کا الزام ثابت: سابق جج سکندر لاشاری کو موت کی سزا

کراچی : جج کے بیٹے کو قتل کرنے کا الزام ثابت ہونے پر انسداد دہشت گردی کی عدالت نے سابق جج سکندر لاشاری کو سزائے موت سنا دی، عاقب شاہانی کو فروری2014 میں جامشورو میں قتل کیا گیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت نے تمام شواہد کی روشنی میں سیشن جج جیکب آباد کے بیٹے عاقب شاہانی کے قتل کا جرم ثابت ہونے پر سابق سیشن جج سکندر لاشاری کو سزائے موت سنادی۔

اس حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ سکندر لاشاری نے جیکب آباد کے جج کے بیٹے کو قتل کیا تھا، کیس کی سماعت کے موقع پر ملزم کو کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت میں پیش کیا گیا۔

مقدمے میں 22 سے زائد گواہوں کے بیانات قلمبند کیے گئے، تفتیش اور شواہد سے یہ بات سامنے آئی کہ سابق سیشن جج مٹھی سکندر لاشاری اور سیشن جج جیکب آباد خالد حسین شاہانی کے درمیان خاندانی تنازع تھا۔

یاد رہے کہ عاقب حسین شاہانی کو فروری 2014 میں جامشورو میں قتل کیا گیا تھا،جب وہ اپنے اہل خانہ کے ہمراہ کار میں جارہے تھے کہ نیاز اسٹیڈیم کے قریب نامعلوم مسلح افراد نے کار سے اتار کر انہیں فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا، ملزم سکندر لاشاری حیدرآباد جیل میں قید ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں