The news is by your side.

Advertisement

حکومت سندھ کا ادنیٰ ملازم اربوں مالیت اثاثوں کا مالک نکلا

کراچی: سندھ میں کرپشن کی ایک اور داستان سامنے آئی ہے، جہاں گریڈ نو کا ملازم اربوں روپے اثاثوں کا مالک نکلا ہے۔

ذرائع کے مطابق نیب نے بورڈ آف ریونیو کےپٹواری ابوبکرجوکھیو کے خلاف تحقیقات کا آغاز کیا ہے، ملزم کے خلاف مختار کار گڈاپ سےملے ریکارڈسے ریفرنس کے لیے رپورٹ تیار کی گئی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ابوبکر جوکھیو کی اراضی سے متعلق نیب نے نو جون کو رپورٹ طلب کی تھی، مختار کار نے اراضی کی تصدیقی رپورٹ ایک ماہ کی تاخیر سےجمع کرائی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ابوبکرجوکھیو کی دیہہ کاٹھور اوربولاری میں سینکڑوں ایکڑ اراضی کا انکشاف ہوا، اراضی تین سال میں ابوبکر جوکھیو کے اہل خانہ کے نام منتقل کرائی گئی۔

ذرائع کا دعویٰ ہے کہ گریڈ نو کا ملازم ایک اہم افسر کا مبینہ فرنٹ مین ہے، سرکاری ملازم کی آخری تعیناتی ضلع غربی میں تھی۔

یہ بھی پڑھیں: وفاق کی سندھ کے فلاحی کاموں کیلئے دی گئی رقم کرپشن کی نذر ہونے کا انکشاف

واضح رہے کہ نیب نے وفاق کی جانب سے سندھ کے فلاحی کاموں کیلئے دیے گئے ساڑھے 3سوارب کی کرپشن کے معاملے کی تحقیقات کا آغاز کررکھا ہے۔

ذرائع کا کہنا تھا کہ رقم سندھ کےڈی سیزکےذریعے عوامی بنیادی حقوق پرخرچ ہوناتھی، ساڑھے 3سوارب روپےخرچ تو کردیئےگئے مگرایک منصوبہ موجودنہیں،
کاغذوں میں اداروں کا اپناسالانہ بجٹ اور وفاقی رقم بھی منصوبوں پرلگادی گئی اور ان منصوبوں پرایک باربھی ترقیاتی کام نہیں کیا گیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں