ہفتہ, مئی 18, 2024
اشتہار

سندھ حکومت کو ناکارہ ہونے والی ایمبولینسوں کا خیال آگیا

اشتہار

حیرت انگیز

حکومت سندھ کی نااہلی کی خبریں میڈیا میں چلنے کے بعد صوبائی حکومت ہوش میں آگئی، ٹھٹہ میں موجود تمام ایمبولینسز کو متعلقہ اضلاع میں روانہ کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق گذشتہ 6 ماہ سے سول اسپتال ٹھٹھہ میں کروڑوں روپے مالیت کی سرکاری ایمبولینسیں کھڑے کھڑے تباہ وبرباد ہورہی تھیں، ریسکیو 1122 اور 1036 کو دی جانے والی ایمبولینس 6 ماہ سے سول اسپتال کے اندر میدان میں کھڑی ہونے سے زنگ آلود اور ناکارہ ہو رہی تھیں۔

سندھ حکومت کے ریسکیو پروگرام 1122 اور 1036 کی 52 زیرو میٹر ایمبولینسز جو گزشتہ کئی ماہ سے کھلے آسمان کے نیچے کھڑی ہیں، جس کی وجہ سے شہری بھی ان سے مستفید نہیں ہورہے تھے۔

- Advertisement -

1122کی تمام ایمبولینس زیرو میٹر تھیں جنہیں تاحال ریسکیو عمل کے لئے استعمال نہیں کیا گیا تھا عوام کے ٹیکس کے پیسوں سے عوام کی فلاح کے لیے خریدی گئی سرکاری ایمبولینسز استعمال ہونے بجائے دھوپ اور دھول مٹی سے ناکارہ ہوکر تباہ ہو رہی تھیں۔

بتایا جاتا ہے کہ شکارپور کے لیے5، میرپورخاص کہ لیے 17، گھوٹکی 10، کشمور اور کندھ کوٹ 10شکارپور5 اور شہید بینظیر آباد 10 ایمبولینسیں روانہ کی جانی تھیں جسے حکومت ٹھٹھہ میں چھوڑ کر بھول گئی تھی۔

Comments

اہم ترین

ویب ڈیسک
ویب ڈیسک
اے آر وائی نیوز کی ڈیجیٹل ڈیسک کی جانب سے شائع کی گئی خبریں

مزید خبریں