The news is by your side.

Advertisement

سندھ کے لوگ نفرتیں نہیں چاہتے، مصطفی کمال

کراچی : پاک سرزمین پارٹی کے سربراہ مصطفی کمال نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ سندھ کے لوگ نفرتیں نہیں چاہتے۔اختیارات کی نچلی سطح تک منتقلی سے پاکستان خوشحال ہوگا۔

تفصیلات کے مطابق پاک سرزمین کے سربراہ مصطفی کمال نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ پورے ملک کے خصوصاً سندھ کے عوام بہت تیزی سے پاک سرزمین پارٹی کا حصہ بن رہے ہیں۔

سندھ کے لوگ قومیتوں، مسالک، پارٹیوں کی بنیاد پر نفرتیں نہیں چاہتے، لوگ ایک دوسرے کے ساتھ بھائی چارگی اور محبت سے رہنا چاہتے ہیں۔

عام آدمی کو اس بات سے غرض نہیں کہ سعودیہ عرب کی جانب سے پاکستانی فوج لڑے گی یا نہیں، کشمیر کا مسئلہ کب حل ہوگا، ہر شخص کو پانی اور بنیادی سہولتوں سے غرض ہے اور وہ ان کے حصول کے لئے نمائندوں کو منتخب کرتا ہے،بدقسمتی سے چاروں صوبوں کی تقدیر کا فیصلہ اسلام آباد میں بیٹھ کر کیا جاتاہے۔

اختیارات نچلی سطح تک منتقل ہونے سے اس کے براہ راست ثمرات عوام کو حاصل ہوں گے اور اس کے ذریعے کرپشن پر بھی قابو کیا جاسکتا ہے۔ عوام کو بنیادی سہولیات ان کے گھروں تک پہنچانا حکومتِ وقت کی ذمہ داری ہے۔

انہوں نے سندھ کے علاقے تھر کے علاقے کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ تھر میں پانی موجود نہیں ہے ایک ماں جس کے بچے پانی نہ ہونے کےباعث ماں کے سامنے سسکتے بلکتے مر جاتے ہیں اُس خاتون کو صرف پانی اور بنیادی سہولیات سے مطلب ہے۔

اس موقع پر انہوں نے مزید کہا کہ کشمیر پاکستان کا مسئلہ ہے، افغانستان ، کشمیر اور خارجہ مسائل پر باقاعدہ پالیسی ترتیب دے کر باضابطہ اعلان کیا جائےگا۔

ایم کیو ایم کے قائد نے اپنے اوپر بھارتی خفیہ ایجنسی را سے متعلق فنڈنگ کے الزامات پر آج تک کوئی جواب نہیں دیا، اس کا واضح مطلب ہے کہ ان کے را سے تعلقات ہیں۔

پاک سرزمین اپنے منشور کے مطابق نسلی اور مسلکی بنیادوں پر قائم نفرتوں کو ختم کر کے لوگوں میں محبتیں قائم کرنے کا جذبہ رکھتی ہے، عوام کی جانب سے ملنے والا رسپانس ہماری کامیابی کی نشانی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں