The news is by your side.

Advertisement

کرونا کے بڑھتے کیسز، کراچی کے مختلف علاقے سیل کرنے کا فیصلہ

کراچی: شہر قائد کے ضلع وسطی میں کرونا کے بڑھتے ہوئے کیسز کے پیش نظر مقامی انتظامیہ نے مائیکرو اسمارٹ لاک ڈاؤن نافذ کردیا جس کا اطلاق 30 دسمبر کی رات 12 بجے سے ہوگا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق کورونا کیسز میں اضافہ کے باعث ضلع وسطی کے تین سب ڈویژنز کے 17 مختلف علاقوں گلبرگ، نارتھ کراچی اور نارتھ ناظم آباد کی 12 یوسیز میں مائیکرو اسمارٹ لاک ڈاون نافذ کرنے کا نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا۔

ضلعی وسطی کے ڈپٹی کمشنر کی جانب سے جاری کردہ نوٹی فکیشن میں بتایا گیا ہے کہ لاک ڈان آج 30 دسمبر سے ہوگا جو 13 جنوری 2021 تک نافذ العمل رہے گا۔

اسمارٹ لاک ڈاؤن کا نفاذ عزیز آباد، علی آباد، کریم آباد، یاسین آباد، دستگیر، ناظم آباد، اصغر علی شاہ اسٹیڈیم، شادمان ٹاؤن، مسلم ٹاؤن اور فردوس کالونی میں کیا گیا ہے جبکہ ضلع وسطی کے 17 علاقوں میں مخصوص گھروں کو سیل بھی کیا جائے گا۔

ڈپٹی کمشنر کی جانب سے جاری ہونے والے نوٹی فکیشن میں بتایا گیا ہے کہ مذکورہ علاقوں میں شہریوں کی نقل و حرکت پر سختی سے پابندی عائد ہوگی جبکہ ہر گھر سے ایک شخص کو کھانے پینے کی اشیا کی خریداری کی مشروط اجازت دی جائے گی، باہر جانے والے شخص کو اپنا شناختی کارڈ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو دکھانا ہوگا۔

مذکورہ علاقوں میں گھر میں کسی بھی قسم کی تقریبات کی اجازت نہیں ہوگی،  رہائشی افراد سے ملاقات کے لیے آنے والوں کو ٹھوس وجہ بتانے پر ہی جانے دیا جائے گا۔

نوٹی فکیشن کے مطابق متعلقہ علاقوں میں ڈبل سواری،سماجی تقریبات، تجارتی سرگرمیوں، غیرمتعلقہ افراد پر پابندی ہوگی جبکہ کریانہ اور میڈیکل اسٹورز کو مخصوص اوقات تک کھلا رکھا جاسکے گا علاوہ ازیں  تمام دیگر کاروباری سرگرمیاں مکمل طور پر بند رہیں گی۔

حکم نامے میں کہا گیا ہے کہ ’ ان علاقوں میں آنے والےصنعتی یونٹ مکمل طور پر بند رہیں گے، رسٹو رینٹس کو ٹیک آوے اور ہوم ڈلیوری کی اجازت نہیں ہوگی، پبلک ٹرانسپورٹ اور آن لائن ٹیکسی سروسز کو بھی علاقوں میں جانے کی اجازت نہیں دی جائے گی‘۔

نوٹی فکیشن کے مطابق مریض کے ساتھ صرف ایک تیماردار کو گھر سے اسپتال جانے کی اجازت دی جائے گی، اسمارٹ لاک ڈاؤن والی گلیوں اور علاقوں میں حکومت ضرورت مند افراد کوراشن فراہم کرے گی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں