The news is by your side.

Advertisement

سری لنکا : اسمگلنگ ميں ملوث “بلی” جيل سے فرار ہونے میں کامیاب

کولمبو : سری لنکا میں جیل حکام کو اس وقت پریشانی کا سامنا کرنا پڑا جب انہیں معلوم ہوا کہ ان کی حراست میں موجود بلی اچانک غائب ہوگئی ہے، مذکورہ بلی اسمگلنگ کے کیس میں رنگے ہاتھوں گرفتار ہوئی تھی۔

تفصیلات کے مطابق سری لنکا ميں پيش آنے والے ايک دلچسپ واقعے ميں منشيات کی اسمگلنگ ميں ملوث ايک بلی جيل سے فرار ہو گئی ہے۔ قيديوں کو منشيات فراہم کرتے وقت رنگے ہاتھوں پکڑی جانے والی اس بلی کو انتہائی سخت نگرانی والی جيل ميں رکھا گيا تھا۔

سری لنکن ذرائع ابلاغ میں پير کو نشر کردہ رپورٹوں کے مطابق ‘مجرم بلی‘کو دارالحکومت کولمبو کی وليکاڈا جيل ميں رکھا گيا تھا۔ تاہم واقعے کے بعد فوری طور پر جيل حکام کا اس پيش رفت پر کوئی رد عمل سامنے نہيں آيا ہے۔

مذکورہ بلی کو پچھلے ہفتے کے دن قيديوں کو دو گرام ہيروئن، دو سم کارڈز اور ايک ميموری چپ پہنچاتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کيا گيا تھا۔ پوليس کے مطابق يہ تمام اشياء پلاسٹک کی ايک تھيلی ميں اس کی گردن پر بندھی ہوئی تھيں، حراست کے بعد بلی کو جيل کے ايک خصوصی کمرے ميں رکھا گيا تھا۔

پير تين اگست کو سری لنکا کے ارونا نامی اخبار ميں شائع ہونے والی رپورٹ ميں اس واقعے کی تفصيلات بيان کی گئيں ہيں، حاليہ دنوں ميں جيل حکام نے قيديوں کو منشيات، ٹيلی فون کے سم کارڈز اور ديگر ممنوعہ اشياء کی فراہمی کے بارے ميں خبردار کيا ہے۔ حکام کے بقول جيل کی ديواروں کے اوپر سے يہ چيزيں قيديوں تک پہنچائی جاتی ہيں اور ايسے واقعات بڑھ رہے ہيں۔

ايشيائی ملک سری لنکا ميں منشيات ايک مسئلہ ہے، خبر رساں ادارے نے اپنی رپورٹوں ميں لکھا ہے کہ منشيات کی اسمگلنگ اور خريد و فروخت روکنے والے پوليس اہلکار اکثر اوقات خود ان چيزوں کے کاروبار ميں ملوث پائے جاتے ہيں، اس حوالے سے پچھلے ہفتے پوليس نے ايک باز کو پکڑا جو کولمبو کے ايک نواحی علاقے ميں منشيات پہنچا رہا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں