The news is by your side.

Advertisement

پینشن کی خاطر ناخلف بیٹے نے ماں کی لاش حنوط کردی

ویانا : یورپی شہری نے پینشن کی رقم حاصل کرنے کےلیے ماں کی لاش کو حنوط کرکے تہہ خانے میں محفوظ کرلیا۔

ماں کی اپنی اولاد سے لازوال محبت ہزاروں داستانیں رقم کرچکی ہے اس کے باوجود بعض لوگ ماں کی محبت کو دولت سے تولتے ہیں اور پیسوں کی خاطر اپنے والدین کی لاش تک حنوط کرکے گھر میں رکھ لیتے ہیں۔

ایسا ہی ایک اور واقعہ یورپی ملک آسٹریا میں پیش آیا جہاں ایک شخص نے پینشن سے ملنے والی رقم کے حصول کےلیے اپنی ماں کی لاش کو گھر کے حنوط کرکے گھر کے تہہ خانے میں محفوظ کرلیا۔

مغربی ٹیرول نامی خطے سے تعلق رکھنے والی ڈیمینشیا کی شکار 89 سالہ خاتون کا انتقال جون 2020 میں قدرتی وجوہات کے باعث ہوگیا تھا، ماں کا انتقال ہوتے ہی اس کے 66 سالہ بیٹے نے لاش کو تہہ خانے میں رکھا اور بو دبانے کے لیے آئس پیکس اور پٹیوں کا سہارا لیا۔

ٹیرول نامی شخص کا مقصد فراڈ کے ذریعے اپنی ماں کی پینشن حاصل کرنا تھا اور ایک سال کے دوران اس نے اپنی ماں کی پینشن کی مد میں 50 ہزار یورو کی رقم وصول کی۔

یہ فراڈ اس وقت منظرعام پر آیا جب ایک نئے پوسٹ مین نے پینشن کی رقم خاتون کو دیکھے بغیر دینے سے انکار کردیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پوسٹ مین کے ماں کو دیکھنے کے اسرار اور ٹیرول کے انکار کی وجہ سے پولیس تفتیش کا آغاز ہوا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزم نے اپنی ماں کو بلی کے کھانے سے ڈھانپ رکھا تھا جس کے نتیجے میں لاش حنوط ہوگئی۔

ملزم نے اعتراف جرم کرتے ہوئے بتایا کہ اس کی آمدنی کا کوئی اور ذریعہ نہیں، حتیٰ کہ ماں کی آخری رسومات کی ادائیگی کےلیے بھی پیسے نہیں تھے اور اگر وہ ماں کی موت آشکار کرتا تو پینشن کا سلسلہ بند ہوجاتا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں