The news is by your side.

Advertisement

ایک سالہ بیٹے کو قتل کرنے والا سفاک باپ اپنے انجام کو پہنچ گیا

کلیو لینڈ : امریکہ میں عدالت نے ایک سال کے بیٹے کے قتل کے جرم میں باپ کو عمر قید کی سزا سنادی، ملزم نے بیوی سے ناراضگی کے بعد اس کو سبق سکھانے کیلئے بیٹے کو قتل کیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست اوہایو کے شہر پیرما کی عدالت نے43 سالہ جیسن شارٹر کو گزشتہ روز عمر قید کی سزا سنائی ہے، ملزم پر الزام تھا کہ اس نے مئی 2018میں اپنے ایک سال کے بیٹے کو دانستہ قتل کیا تھا۔

کیس کی سماعت کے دوران اس بات کا انکشاف ہوا کہ ملزم نے اپنی بیہوی سے جھگڑے کے بعد اسے سبق سکھانے کیلئے اس کے بیٹے کا قتل کیا، استغاثہ کا کہنا ہے کہ واردات کے روز ملزم شارٹر اپنے بیٹے کے ساتھ ریجنسی ڈرائیو اور لارینٹ ڈرائیو کے قریب اپنے اپارٹمنٹ سے نکلا۔

اسے شام کے بعد اس بچے کو اپنی ماں کے پاس ملاْنے کیلئے لے جانا تھا۔ پولیس کے مطابق اس نے اپارٹمنٹ کی پارکنگ گیراج میں اپنی کار کھڑی کی اور بچے کو کار کی پچھلی سیٹ پر چاقو سے پے در پے وار کیے واردات کے دو تقریباً دو گھنٹے بعد ملزم شارٹر نے پیرما پولیس ڈیپارٹمنٹ کو بتایا کہ وہ بیٹے کو قتل کرنے بعد خود کشی کررہا ہے۔

اس دوران اس نے خود کشی کی کوشش کی جس کے باعث اس کی کلائی سے خون بہہ رہا تھا۔ پولیس کے پہنچنے پر شارٹر نے بتایا کہ اس نے اپنے بیٹے کو قتل کردیا ہے اور اس کی لاش کار میں پڑی ہے۔

بعد ازاں پولیس نے شدید زخمی حالت میں بچے کو کار سے نکال کر اسپتال منتقل کیا لیکن وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہلاک ہوگیا، عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد جیسن شارٹر کو مجرم قرار دیتے ہوئے عمر قید کی سزا سنادی۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں