The news is by your side.

Advertisement

جنوبی افریقہ کا پاکستان کو 274 رنز کا ہدف

سنچورین: پاکستان اور جنوبی افریقا کے درمیان کھیلے جارہے پہلے ایک روزہ میچ میں پروٹیز نے پاکستان کو جیت کے لئے 274 رنز کا ہدف دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق تین میچوں پر مشتمل سیریز کے پہلے میچ میں پاکستانی ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے ٹاس جیتا اور جنوبی افریقا کو پہلے بیٹنگ کی دعوت دی، میزبان ٹیم نے بلےباز راسی وین ڈیر ڈوسن کی ناقابل شکست سینچری کی بدولت مقررہ پچاس اوورز میں چھ وکٹوں کے نقصان پر 273 رنز بنائے۔

ڈیوڈ ملر نے پاکستان کے خلاف نصف سینچری اسکور کی اور 56 رنز بنائے، قومی ٹیم کے فاسٹ بولرز نے 55 رنز پر پروٹیز کے 4 کھلاڑیوں کو پویلین کی راہ دکھائی، تاہم ڈیوڈ ملر اور راسی وین ڈیر ڈوسن نے پانچویں وکٹ کی شراکت میں 116 قیمتی رنز کا اضافے کرتے ہوئے اپنی ٹیم کی پوزیشن کو مستحکم کیا۔

میزبان ٹیم ن کے  بلےباز راسی وین ڈیر ڈوسن کی پاکستان کے خلاف شاندار سینچری اسکور کی انہوں نے کھیل کے آخری لمحات میں تیز رفتاری سے رنز بنائے، راسی وین ڈیر ڈوسن 123 رنز بنائے ان کی اننگز میں دس چوکے اور دو چھکے شامل تھے۔

پاکستان کی جانب سے شاہین شاہ آفریدی،حارث رؤف نے2 دو کھلاڑیوں کو آؤٹ کیا، محمد حسنین اور فہیم اشرف نے ایک ایک وکٹ حاصل کی۔

پروٹیز کے خلاف پہلے ون ڈے کی فائنل الیون میں کپتان بابراعظم ، فخر زمان ، امام الحق ، آصف علی اور محمد رضوان ، شاداب خان ، فہیم اشرف، محمد حسنین، شاہین شاہ آفریدی اور حارث روف شامل ہیں، اس کے علاوہ دانش عزیز کو ڈیبیو کرایا گیا

بابر اعظم دورہ افریقا کے موقع پر پہلی بار کپتانی کے فرائض انجام دئیے جبکہ آج کا دن جنوبی افریقہ کی کرکٹ ٹیم کے لیے بھی تاریخی رہا کیونکہ پہلی بار جنوبی افریقی ٹیم کی قیادت سیاہ فام کپتان ٹیمبا باووما نے کی۔

اس سے قبل جنوبی افریقہ میں سیاہ فام تماشائیوں کو پنجروں میں بند کرکے کرکٹ میچ دکھایا جاتا تھا، نیلسن منڈیلا نے جنوبی افریقہ کی تاریخ بدلی، نسلی تعصب کی وجہ سے جنوبی افریقی ٹیم پر پابندی لگ چکی ہے، جنوبی افریقہ 1970 سے 1991 تک انٹرنیشنل کرکٹ سے باہر رہا۔

دورہ جنوبی افریقا میں قومی ٹیم کی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے تو قومی کرکٹ ٹیم کی پروٹیز کے دیس میں یہ چھٹی سیریز ہے، تاہم گرین شرٹس اب تک ایک سیریز اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوئی اور چار سیریز میں اسے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا جبکہ ایک سیریز برابر رہی تھی۔قومی کرکٹ ٹیم نے سال دوہزار تیرہ میں پہلی بار پروٹیز کے ہوم گراؤنڈ میں ایک روزہ سیریز اپنے نام کی تھی۔

اس کے علاوہ ایک روزہ میچز میں دونوں ٹیمیں اناسی بار آمنے سامنے آئیں، جن میں سے 28 میچز گرین شرٹس کے نام رہے جبکہ 50 میچز میں پروٹیز نے کامیابی حاصل کی۔

پروٹیز کے خلاف ایک روزہ سیریز کے بعد ٹی ٹوئنٹی سیریز بھی کھیلی جائے گی بعد ازاں قومی ٹیم دورہ زمبابوے کے لئے روانہ ہوگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں