The news is by your side.

شہید ایس پی طاہر داوڑ کو تشدد کر کے قتل کیا گیا، پوسٹ مارٹم رپورٹ سامنے آگئی

پشاور: افغانستان میں شہید کیے جانے والے خیبرپختونخواہ پولیس کے ایس پی طاہر داوڑ کی پوسٹ مارٹم رپورٹ سامنے آگئی۔

تفصیلات کے مطابق ایس پی پشاور طاہر داوڑ شہید کی پوسٹ مارٹم رپورٹ میں یہ بات سامنے آئی کہ اغوا کے بعد اور قتل سے پہلے پولیس افسر کو کئی روز تک بھوکا پیاسا رکھا گیا۔

رپورٹ میں یہ بات سامنے آئی کہ طاہر داروڑ کے جسم پر گولی کا نشان نہیں البتہ جسم پر تشدد کے واضح نشانات ہیں، ایس پی کو لاش برآمد ہونے سے چند روز قبل قتل کیا گیا تھا۔ میڈیکل ٹیم نے رپوٹ اسلام آباد پولیس کے حوالے کردی۔

مزید پڑھیں: ایس پی طاہر داوڑ کی شہادت سے محکمہ پولیس فرض شناس افسرسے محروم ہوگیا: وزیراعظم

یاد رہے کہ ایس پی طاہر داوڑ کو اسلام آباد سے اغوا کیا گیا تھا، مگر اُن کی تشدد زدہ لاش افغانستان سے ملی تھی۔ میت کی حوالگی کے موقع پر افغان حکام نے انتہائی منفی اور غیرسفارتی رویہ اختیار کیا تھا۔ واضح رہے کہ شہید ایس پی طاہر داوڑ کی نماز جنازہ پشاور میں ادا کی گئی تھی جس کے بعد انہیں حیات آباد فیز 6 کے قبرستان میں سپرد خاک کیا گیا تھا۔

بعد ازاں وزہراعظم عمران خان نے ایس پی طاہرداوڑ کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے وزیر مملکت داخلہ شہریارآفریدی کوتحقیقات کی نگرانی کا حکم دیتے ہوئے فوری رپورٹ طلب کی تھی  اور خیبرپختونخواکی پولیس کو تحقیقات میں اسلام آبادپولیس سے تعاون کرنے کی ہدایت بھی جاری کی تھی۔

یہ بھی پڑھیں: ایس پی طاہر داوڑ کی میت حوالگی میں تاخیر کیوں ہوئی؟ اندرونی کہانی سامنے آگئی

بعد ازاں ایس پی طاہر داوڑ کے اغوا اور قتل کی تحقیقات کے لیے سات رکنی جے آئی ٹی تشکیل دی گئی، جس کی سربراہی ایس ایس پی انویسٹی گیشن کے سپرد ہے جبکہ آئی ایس آئی، آئی بی اور ایم آئی کے نمائندے بھی تحقیقاتی کمیٹی میں شامل ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں