site
stats
عالمی خبریں

سینٹ پیڑزبرگ دھماکہ، خود کش بمبار کا تعلق وسطی ایشیا سے ہے

ماسکو : روس کے شہرسینٹ پیڑزبرگ کے میڑواسٹیشن میں دھماکے کی تحقیقات جاری ہیں، 2مشتبہ افراد کی نشاندہی کرلی گئی، خود کش بمبار کا تعلق وسطی ایشیا سے ہے۔

خبر رساں ایجنسی کے مطابق سینٹ پیڑزبرگ کے زیرِ زمین ٹرین اسٹیشن پر دھماکہ کی تحقیقات جاری ہے ، دو مشتبہ افراد کی نشاندہی ہوگئی ہے، کیمروں کی مدد سے میٹرو اسٹیشن پر دھماکے کے مشتبہ ملزم کی نشاندہی کی گئی ہے، ایک مشتبہ شخص کی عمر تئیس سال اور تعلق وسط ایشیا سے ہے، وہ ایک بیگ میں باروی مواد لے کر سینٹ پیٹرز برگ کے میٹرو اسٹیشن پر پہنچا۔

r2

 

روسی حکام کا کہنا ہے کہ دھماکہ خودکش بمبار نے کیا، مشتبہ افراد کی تلاش کے لئے مختلف علاقوں میں سرچ آپریشن جاری ہے، حکام نے اس واقعے کی تفتیش شروع کر دی ہے تاہم دیگر ممکنہ وجوہات کی بھی تحقیقات جا رہی ہیں۔

ابتدائی اطلاعات کے مطابق یہ دھماکے سینٹ پیٹرزبرگ میں سنایا پلوشیڈ اور ٹیکنالوجسکی میں ہوئے تاہم روس کی قومی انسدادِ دہشت گرد کمیٹی نے بعد میں تصدیق کی کہ یہ دھماکہ سنایا پلوشیڈ اور ٹیکنالوجسکی سٹیشن کے درمیان ہوا۔

r3

سینٹ پیڑربرگ میں دھماکے کے بعد فضا سوگوار ہے جبکہ ہلاک ہونے والوں کی یاد میں لوگوں نے شمعیں روشن کیں اور پھول رکھے گئے۔

r1

دوسری جانب روسی صدر ولادی میرپوتن نے واقعے کے بعد انٹیلی جنس اور سیکیورٹی اداروں کے ایک اجلاس کی صدارت کی، اجلاس میں سینٹ پیٹرز برگ میں ہونے والے دھماکے کے بعد سیکیورٹی کی صورت حال کا جائزہ لیا گیا، انکا کہنا تھا کہ دھماکہ دہشتگردی ہے۔

روس کے وزیرِ اعظم نے فیس بک پر ایک پوسٹ میں دھماکے کو ‘دہشت گرد’ حملہ قرار دیا ہے جبکہ امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے دھماکے کی مذمت کرتے ہوئے واقعہ کو خوفناک قراردیا۔


مزید پڑھیں : روس میں ریلوے اسٹیشن پر دو دھماکے، 11 ہلاک، 45  زخمی


یاد رہے کہ گذشتہ روز روس کے شہر سینٹ پیٹرز برگ کے ریلوے اسٹیشن پر 2 دھماکوں میں 11 افراد جاں بحق اور 45  زخمی ہوگئے تھے، جس کے بعد دیگر 7 ریلوے اسٹیشنز کو بند کردیا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top