The news is by your side.

Advertisement

فوت شدہ پالیسی ہولڈرز: ‘لواحقین کو 7 لاکھ روپے ادا کیے جائیں’

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے اسٹیٹ لائف کو فوت شدہ پالیسی ہولڈرز کے لواحقین کو 7 لاکھ کے انشورنس کلیمز ادا کرنے کی ہدایت کر دی۔

انشورنس کمپنی نے انشورنس پالیسی لیتے وقت بیماری چھپانے کا الزام لگا کر لواحقین کو رقم دینے سے انکار کر دیا تھا۔

صدر مملکت نے واضح کیا ہے کہ انشورنس آرڈیننس 2000ء کے مطابق انشورنس پالیسی حاصل کرنے کے 2 سال بعد پالیسی پر سوال نہیں اٹھایا جا سکتا انشورنس کمپنی کی درخواست مسترد کی جاتی ہے، ادارہ 30 دنوں کے اندر حکم کی تعمیل کرے۔

صدر مملکت کا کہنا ہے کہ کمپنی کی جانب سے فراہم کردہ دستاویزات پالیسی حاصل کرنے کے بعد کی بیماری سے متعلق ہیں جو قابل قبول نہیں، دونوں کیسز میں متوفی پالیسی ہولڈرز کو کمپنی کے فیلڈ افسران نے صحت مند قرار دیا تھا۔

اسٹیٹ لائف کی اپیل مسترد، صدر کا بیواؤں کو انشورنس رقم ادا کرنیکا حکم

واضح رہے کہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے وفاقی محتسب کے فیصلے کے خلاف اسٹیٹ لائف انشورنس کمپنی کی اپیل کو مسترد کرتے ہوئے کمپنی کو10 سال سے منتظر بیواؤں کو انشورنس کلیم کی رقم ادا کرنے کا حکم برقرار رکھا تھا اور کہا دیا تھا کہ فائر بریگیڈ ڈیپارٹمنٹ ملتان کے فائر مینز کی بیواؤں کو گروپ انشورنس کی رقم ادا کی جائے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں