The news is by your side.

Advertisement

بینک میں ڈکیتی، امریکی نے کیا چرایا؟ جان کر آپ حیران رہ جائیں گے

آئیووا: امریکا کی ایک ریاست میں ایک شخص بینک کا شیشہ توڑ کر اندر گیا تو اس نے ایک ایسی چیز چرائی جس کے بارے میں جان کر پولیس بھی حیران ہو گئی۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق امریکی ریاست آئیووا کی پولیس کو سیکورٹی نیشنل بینک کی جانب سے ایمرجنسی کال موصول ہوئی، بتایا گیا کہ کوئی بینک کا شیشہ توڑ کر اندر آیا ہے اور ڈکیتی کی گئی ہے۔

پولیس کا کہنا تھا کہ جب اہل کار بینک پہنچے تو وہ یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ چور نے بینک سے ہینڈ سینی ٹائزر کے علاوہ کچھ نہیں چرایا تھا، ہینڈ سینی ٹائزر لے کر وہ دوبارہ بھاگ گیا تھا۔

معلوم ہوا کہ 39 سالہ شخص مارک گرے نے آدھی رات کے بعد بینک کا شیشہ توڑا اور اندر داخل ہو کر اس نے صرف ہینڈ سینی ٹائزر کی بوتل چرائی، اور بھاگ گیا، تاہم پولیس نے بعد ازاں اسے گرفتار کر لیا۔

پولیس کا کہنا تھا کہ سیوکس سٹی میں پے در پے تین ڈکیتیاں کی گئی تھیں، جس کے پیش نظر گرفتار شخص مارک گرے کو پولیس حراست میں رکھنے کا فیصلہ کیا گیا اور اس کے خلاف سینٹی ٹائزر چرانے کا مقدمہ درج کیا گیا۔

پولیس ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے جاری پریس ریلیز میں کہا گیا تھا کہ منگل کی صبح سب سے پہلے وہ ایک کونسلنگ سینٹر میں ڈکیتی کی شکایت پر تحقیقات کے لیے گئے لیکن پتا چلا کہ کچھ بھی نہیں چرایا گیا ہے، بعد ازاں پولیس کو ایک مقامی ریسٹورنٹ کے ٹوٹے شیشے کی شکایت پر جانا پڑا، پولیس کو اس تفتیش کے دوران معلوم ہوا کہ ان تینوں واقعات میں مارک گرے نامی شخص ملوث ہے۔

گرے کو تھرڈ ڈگری چوری کے تین الزامات کے تحت وُڈبری کاؤنٹی جیل بھیجا گیا۔

واضح رہے کہ کرونا وائرس کی عالم گیر وبا کے ابتدائی مہینوں میں ہینڈ سینٹی ٹائزر کی طلب بہت زیادہ بڑھ گئی تھی اور کئی ممالک میں اس کی قلت ہو گئی تھی، جب کہ سینٹی ٹائزر چوری کرنے کی وارداتیں بھی عروج پر پہنچ گئی تھیں، حتیٰ کہ اسپتالوں سے بھی ہینڈ سینی ٹائزرز چرائے گئے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں