The news is by your side.

معمولی بات پر طالب علم کا پرنسپل سے سفاکانہ بدلہ، لوگوں کے دل دہل گئے

بھارت میں ہونے والے فائرنگ کے واقعے نے لوگوں کو سوچنے پر مجبور کردیا، ذرا سی بات پر طالب علم نے اپنے کالج پرنسپل کو گولیوں سے بھون دیا۔

بھارتی ریاست اتر پردیش کے شہر سیتا پور کے مقامی کالج میں اس وقت افراتفری مچ گئی جب 12ویں جماعت کے طالب علم نے اچانک اپنے پرنسپل پر اندھا دھند فائرنگ کردی۔

گزشتہ روز ہونے والی واردات کے بعد پولیس نے 12ویں جماعت کے طالب علم کو گرفتار کرلیا اور ملزم سے مزید تفتیش کی جارہی ہے تاہم پولیس یہ تحقیقات کررہی ہے کہ ملزم نے اسلحہ کہاں سے حاصل کیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق کالج کے دو طالب علم گرویندر سنگھ اور روہت موریہ کے درمیان کلاس میں نشست پر بیٹھنے کے حوالے سے جھگڑا ہوا۔ جس پر پرنسپل نے دونوں کے درمیان مفاہمت کروا کر معاملہ ختم کرادیا جس کا طالب علم کو رنج تھا۔

اگلے ہی دن ہفتہ کے روز صبح تقریباً 7 بجے پرنسپل رام سنگھ ورما کالج کے باہر تعمیراتی کام کا معائنہ کر رہے تھے کہ گرویندر سنگھ نے آکر غیر قانونی اسلحہ سے پرنسپل پر اندھا دھند فائرنگ کردی۔

پولیس رپورٹ کے مطابق پہلی گولی ان کو چھو کر نکل گئی، اس کے بعد وہ کالج کی جانب بھاگنے لگے تو ملزم نے دوسری گولی ان کے سر پر ماری اور تیسری گولی ان کے پیٹ پر جا لگی، واردات کے بعد فرا ر ہوگیا۔

پولیس نے موقع پر پہنچ کر شدید زخمی پرنسپل کو فوری طبی امداد کیلئے مقامی اسپتال روانہ کیا، بعد ازاں پولیس نے ملزم طالب علم کو حراست میں لے لیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں