The news is by your side.

Advertisement

300 سال قبل ڈوب جانے والا جہاز، جس پر ٹنوں سونا چاندی لدا ہوا تھا

300 سال قبل ٹنوں سونے، چاندی اور ہیرے جواہرات سے لدے سمندر میں ڈوب جانے والے بحری جہاز کی نئی تصاویر جاری کردی گئیں۔

تاریخی سان ہوزے بحری جہاز 300 سال پہلے گہرے سمندر میں ڈوب گیا تھا اور اس کا نام سنتے ہی پوری دنیا میں خزانہ تلاش کرنے والوں کے دلوں کی دھڑکنیں تیز ہو جاتی ہیں۔

ماہرین کے مطابق اس جہاز پر کم از کم 200 ٹن سونا، چاندی اور قیمتی جواہرات موجود تھے، یہ بادبانی جہاز 1708 میں کولمبیا کے بندرگاہی شہر کارٹیجینا کے ساحل کے قریب ڈوب گیا تھا۔ اس پر لدے خزانے کی مالیت کئی بلین امریکی ڈالر لگائی جاتی ہے۔

سنہ 2015 میں جب اس گمشدہ جہاز کا ملبہ دریافت ہوا تو کولمبیا کے صدر خوآن مانوئل سانتوس نے اسے انسانی تاریخ میں ملنے والا اب تک کا سب سے قیمتی خزانہ قرار دیا تھا۔

950 میٹر کی گہرائی میں حالیہ وسیع غوطہ خور مہم کے بعد کولمبیا کی فوج نے اب اس افسانوی بحری جہاز اور اس کے خزانوں کی نئی تصاویر شائع کی ہیں۔

ان تصاویر میں توپیں، چینی مٹی کے برتن، شیشے کی بوتلیں اور بظاہر سنہری سکے بھی دیکھے جا سکتے ہیں، کولمبیا کے قائم مقام صدر ایوان ڈیوک کے مطابق یہ اس جہاز کی اب تک کی سب سے درست تصاویر ہیں۔

غوطہ خور ٹیمیں ہائی ٹیک آلات کے ساتھ چار مرتبہ اس جہاز کے ملبے تک گئیں اور اس مشن میں ریموٹ کنٹرول ڈائیونگ روبوٹ بھی شامل تھا۔

اس دوران غوطہ خور اس بات کا تعین کرنے کے قابل تھے کہ یہ ملبہ ابھی تک انسانی مداخلت سے محفوظ رہا ہے، تاہم تباہ ہونے والے اس مشہور جہاز کی شاندار تصاویر کے ساتھ ساتھ گہرائی میں اترنے سے کچھ اور بھی پتہ چلا ہے۔

چند سو میٹر کے فاصلے پر کیمرے کے سامنے 2 دیگر جہازوں کا ملبہ بھی آیا، اندازوں کے مطابق ایک جہاز کا ملبہ نو آبادیاتی دور سے پہلے اور ایک کا اس دور کے بعد کا ہے۔

سان ہوزے پر لدا یہ خزانہ لاطینی امریکا میں ہسپانوی نو آبادیوں سے جمع کیا گیا تھا اور 1708 میں اسے ہسپانوی بادشاہ فلپ پنجم کے دربار میں بھیجا جا رہا تھا لیکن یہ وہاں کبھی نہیں پہنچ سکا۔

7 جون کی رات اس جہاز اور اس کے خزانے کو برطانوی بحری بیڑے نے بحیرہ کیربیئن میں ڈبو دیا، عملے کے 600 یا اس سے زیادہ ارکان میں سے صرف چند ہی زندہ بچ سکے تھے۔

اس کے بعد کولمبیا نے ملبے کو بچانے اور خزانہ ڈھونڈنے کا ارادہ کیا، اس مشن پر 65 ملین ڈالر کے قریب رقم خرچ ہونا تھی۔ اس بحری جہاز کے ملبے کو کارٹیجینا کے ایک میوزیم میں رکھا جائے گا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں