The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹر یاسمین راشد کو توہینِ عدالت کا نوٹس جاری، 2 دن میں جواب طلب

لاہور: سپریم کورٹ نے پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن (پی ایچ سی) کے بورڈ ممبران کی تقرری پر صوبائی وزیرِ صحت یاسمین راشد کو توہینِ عدالت کا نوٹس جاری کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ نے وزیرِ صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد کو توہینِ عدالت کا نوٹس جاری کر دیا، عدالت نے ان سے دو دن میں جواب طلب کیا ہے۔

پی ایچ سی بورڈ کے مجوزہ نام سپریم کوٹ میں پیش کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔

چیف جسٹس

چیف سیکرٹری پنجاب، سیکرٹری ہیلتھ اور ایڈیشنل سیکرٹری ہیلتھ کو بھی نوٹس جاری کر دیے گئے۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا کہ پی ایچ سی بورڈ کے مجوزہ نام سپریم کوٹ میں پیش کرنے کا حکم دیا گیا تھا، سپریم کورٹ کی منظوری کے بغیر ہی نوٹی فکیشن جاری کر دیا گیا۔

عدالت نے ہیلتھ کیئرکمیشن کا نیا بورڈ بھی تحلیل کر دیا۔ یاد رہے کہ 17 نومبر کو چیف جسٹس نے پنجاب ہیلتھ بورڈ تحلیل کر کے حکم دیا تھا کہ اہل لوگوں کو لے کر نیا بورڈ تشکیل دیا جائے اور عدالت سے ان کی منظوری لی جائے۔

یہ بھی پڑھیں:  بچے کی پیدائش سے قبل والدین کو جنس بتانے پر پابندی کے لیے بل پر کام شروع

لاہور رجسٹری میں کیس کی سماعت کے دوران عدالت نے پنجاب ہیلتھ منسٹر یاسمین راشد اور بورڈ کے ارکان کو یہ معلوم کرنے کے لیے طلب کیا تھا کہ پی ایچ سی کے سربراہ جسٹس ریٹائرڈ عامر رضا خان نے استعفیٰ کیوں دیا تھا۔

چیف جسٹس نے وزیرِ صحت کو ہدایت کی تھی کہ دو ہفتوں کے اندر اندر بورڈ میں اہل لوگوں کو تعینات کر کے رپورٹ عدالت میں پیش کی جائے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں