The news is by your side.

Advertisement

حکومت کوتاج محل کا رنگ بدلنے کی پروا نہیں‘ بھارتی سپریم کورٹ

نئی دہلی : بھارتی سپریم کورٹ نے حکومت کو حکم دیا ہے کہ وہ تاج محل کے رنگ بدلنے کے مسئلے کے حل کے لیے بیرونی ماہرین کی خدمات حاصل کرے۔

تفصیلات کے مطابق تاج محل کے رنگ بدلنے کے مسئلے پرانڈین سپریم کورٹ نے حکومت کو حکم دیا کہ وہ بھارت یا باہر سے ماہرین کی خدمات حاصل کرے اور اس مسئلے کو حل کرے۔

بھارتی سپریم کورٹ نے کہا کہ اس یادگار کا رنگ پیلا پڑگیا ہے اور حصوں کا رنگ بھورا اور سبز ہوتا جا رہا ہے لیکن شاید حکومت کو تاج محل کے رنگ بدلنے کی پروا نہیں ہے۔

تاج محل کے قریب واقع دریائے جمنا میں بہہ کر آنے والی گندگی کے باعث وہاں کیڑے مکوڑے پھل پھول رہے ہیں جو تاج کی دیواروں کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔

خیال رہے کہ اس سے قبل حکومت نے تاج محل کے قریب ہزاروں کارخانے بند کروا دیے تھے لیکن ماحولیات کے کارکنوں کا کہنا ہے کہ یہ اقدام کافی نہیں ہے، تاج کی چمک ماند پڑتی جا رہی ہے۔

ماحولیات کے کارکنوں کے مطابق روزانہ 70 ہزار لوگ تاج محل کی سیر دیکھنے آتے ہیں۔


وزیراعلیٰ یوگی آدیتیہ ناتھ نے تاج محل کو مسلمانوں کی نشانی قراردے دیا

یاد رہے کہ گزشتہ سال 21 جون کو بھارتی ریاست اتر پردیش کے انتہا پسند وزیراعلیٰ یوگی آدیتیہ ناتھ نے دنیا کے عجوبوں میں شامل تاج محل کو مسلمانوں کی نشانی قرار دیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں