یواے ای میں 14 سال کا بچہ سمندرمیں ڈوب کرجاں بحق -
The news is by your side.

Advertisement

یواے ای میں 14 سال کا بچہ سمندرمیں ڈوب کرجاں بحق

راس الخیمہ: متحدہ عرب امارات کے علاقے راس الخیمہ میں ڈوبنے والے بچے کی میت دو روز کی جدو جہد کے بعد تلاش کرلی گئی ہے۔

تفصیلات کےمطابق جمعے کی دوپہر راس الخیمہ کےعلاقے الدہان میں دو بچے سمندر میں نہاتے ہوئے ڈوب گئے تھے، ڈوبنے والے بچوں کی عمریں 14 اور 12 برس تھیں۔

موقع پرموجود لوگوں نے 12 سالہ ایشیائی بچے کو بچا لیا تھا ، تاہم 14 سالہ عرب بچے کو نہیں بچا سکے تھے۔ پولیس کے مطابق انہیں جمعے کی شام چار بجے مدد کے لیے کال موصول ہوئی جس کے بعد ریسکیو کی کارروائی شروع کی گئی۔

پولیس کی جانب سے کی جانے والی کارروائی میں ڈوبنے والے بچے کوتلاش کرلیا گیا تاہم اس وقت تک وہ موت کے منہ میں جاچکا تھا، ضروری کارروائی کے بعد بچے کی میت تدفین کے لیے اہل خانہ کے حوالے کردی گئی ۔ دوسرا بچہ جسے موقع پر بچایا گیا تھااس کی شناخت صالح علی صالح کے نام سے ہوئی ہے،  اسے وہیں طبی امداد فراہم کردی گئی۔

پولیس کے مطابق یہ دونوں بچے ممنوعہ علاقے میں نہارہے تھے۔ ساحل کے اس علاقے میں زبردست لہریں پیدا ہوتی ہیں جس کے سبب اس علاقے کو خطرناک قرار دیا گیا ہےاور تیراکی سے ممانعت کی ہدایات بھی آویزاں ہیں۔

اس واقع کے بعد پولیس نے عوام سے درخواست کی ہے کہ ساحل پر ممنوعہ علاقوں سے دور رہیں اور تیراکی کے دوران تمام ضروری حفاظتی انتظامات ضرور اختیار کریں ، انہوں نے والدین سے بھی اپیل کی ہے کہ اپنے بچوں کو کسی بھی صورت ممنوعہ علاقے میں نہانے کی اجازت ہر گز نہ دیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں