The news is by your side.

Advertisement

سابق بھارتی فوجی تیج بہادر کا مودی کے خلاف الیکشن لڑنے کا اعلان

نئی دہلی: مقبوضہ کشمیر میں تعینات رہنے والے سابق بھارتی فوجی تیج بہادر کا کہنا ہے کہ مودی کے خلاف الیکشن لڑنے کا مقصد یہ دکھانا ہے کہ کس طرح مودی سرکار نے فوج کو ناکام کیا۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی فورسز میں اہلکاروں کو دیے جانے والے ناقص کھانے کا بھانڈا پھوڑنے والے سابق بی ایس ایف اہلکار تیج بہادر نے نریندرمودی کے خلاف الیکشن لڑنے کا اعلان کردیا۔

تیج بہادر کا کہنا ہے کہ الیکشن لڑنے کا مقصد ہارجیت نہیں دکھانا ہے، مودی سرکارنے کس طرح فوج کوناکام کیا۔

سابق بی ایس ایف اہلکار کا کہنا تھا کہ بھارتی وزیراعظم نریندرمودی فوجیوں کے نام پرووٹ مانگتے ہیں۔

تیج بہادر کو بھارتی فوج میں سہولتوں کی شکایت پربرطرف کیا گیا تھا، تیج بہادر نے بھارتی فوجیوں سے ناروا سلوک، ناقص کھانے کی ویڈیو اپ لوڈ کی تھی۔

یاد رہے کہ ستمبر2017 میں سابق بھارتی فوجی تیج بہادر کا کہنا تھا کہ سرجیکل اسٹرائیک مودی سرکارکی ڈرامے بازی ہے،سرجیکل اسٹرائیک کے نام پرعوام کوبیوقوف بنایا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ دو سال قبل بھارتی فوجی اہلکار تیج بہادریادیو نے سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو جاری کی تھی، جس میں بھارتی فوجی اہلکاروں کے ساتھ ہونے والے ناروا سلوک کا پردہ فاش کیا تھا، اپنی ویڈیو میں اس کا کہنا تھا کہ ہمیں ملنے والا کھانا افسران کھا جاتے ہیں یا پھر بازار میں بیچ دیا جاتا ہے۔

بھارتی فوجی نے ویڈیو جاری کرکے اپنی فوج کو بے نقاب کردیا

بعدا زاں بی ایس ایف اہلکار تیج بہادر کو نوکری سے فارغ کردیا گیا تھا جبکہ تیج بہادر نے فیصلے کے خلاف عدالت جانے کا اعلان کیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں