The news is by your side.

Advertisement

خوشحال زندگی کا خواب لیے بیرون ملک جاکر نوجوان پھنس گیا

وارسا: بہتر روزگار اور خوش حال زندگی کا خواب لے کر بیرون ملک جانے والا بھارتی مسلمان نوجوان قیدوبند کی زندگی گزارنے پر مجبور ہوگیا جبکہ پریشان حال والدین بیٹے کی رہائی کے لیے دربدر کی ٹھوکریں کھارہے ہیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق بھارتی شہری محمد فیض الدین 2017 سے یورپی ملک پولنڈ میں پیزا ڈیلیوری کا کام کررہا تھا تاہم مالی بے ضابطگیوں کے باعث پولیس نے گرفتار کرلیا۔

پولینڈ میں قید نوجوان پر کرپشن کا الزام ہے۔ والدین کا کہنا ہے کہ 2019 سے بیٹے سے رابطہ نہیں ہوا، غربت کے باعث اپنے بچے کی بازیابی کے لیے اخراجات بھی برداشت نہیں کرسکتے جبکہ بھارتی سرکار بھی ساتھ نہیں دے رہی۔

والدین نے بھارتی سفارت خانوں سے رابطے تیز کردیے انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ سرکاری اخراجات پر وکیل مل جائے تو پولینڈ میں کیس لڑکے ہم اپنے بچے کی رہائی یقینی بناسکتے ہیں، بیٹا بے قصور ہے۔

والدین نے بتایا کہ آخری فون کال کے دوران محمد فیض الدین کا کہنا تھا کہ اس نے کسی قسم کی کرپشن نہیں کی اور ایمانداری سے اپنا فرض نبھا رہا تھا، غلط فہمی کے تحت مجھے حراست میں رکھا گیا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں