The news is by your side.

نئے اٹارنی جنرل کے تقرر میں حکومت کو ناکامی کا سامنا

اٹارنی جنرل اشتر اوصاف کو مستعفی ہوئے 2 ماہ سے زائد کا عرصہ گزر چکا ہے تاہم وفاقی حکومت تاحال نئے اٹارنی جنرل کا تقرر نہیں کرسکی ہے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق وفاقی حکومت کو نئے اٹارنی جنرل کے تقرر میں ناکامی کا سامنا ہے اور دو ماہ سے زائد وقت گزر جانے کے باوجود شہباز حکومت نئے اٹارنی جنرل کا تقرر نہیں کرسکی ہے۔

اٹارنی جنرل اشتر اوصاف کو مستعفی ہونے کے بعد وفاقی حکومت نے انہیں نئے اٹارنی جنرل کے تقرر تک کام جاری رکھنے کا مشورہ دیا تھا تاہم دو ماہ گزر جانے کے باوجود حکومت کی جانب سے اس حوالے سے کوئی پیشرفت نہیں ہوئی ہے۔

اس وقت اٹارنی جنرل آفس کا نظام ایڈیشنل اٹارنی جنرل عامر رحمان چلا رہے ہیں۔

واضح رہے کہ اشتر اوصاف نے 12 اکتوبر کو اٹارنی جنرل کے عہدے سے استعفیٰ دیا تھا اور مستعفی ہونے کی وجہ اپنی خرابی صحت کو قرار دیا تھا۔

یہ بھی پڑھیں: اٹارنی جنرل اشتر اوصاف علی نے استعفیٰ دے دیا

وزیراعظم شہباز شریف نے ہی وزارت عظمیٰ کا منصب سنبھالنے کے بعد اشتر اوصاف کو مئی میں اٹارنی جنرل آف پاکستان مقرر کیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں