The news is by your side.

Advertisement

دریائے ستلج 8 افراد کی زندگیاں نگل گیا

اوکاڑہ: دریائے ستلج میں ملہوشیخو کے قریب کشتی ڈوبنے سے 8 افراد جاں بحق جبکہ متعدد لاپتہ ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق شہر اوکاڑہ کے علاقے مہلوشیخو کے قریب دریائے ستلج میں کشتی الٹ گئی جس کے نتیجے میں 8افراد جاں بحق اور کئی لاپتہ ہوگئے۔

ریسکیو ذرائع کا کہنا ہے کہ جاں بحق ہونے والے آٹھوں افراد کی لاشیں نکال لی گئیں، جبکہ کشتی میں درجن سے زائد افراد سوار تھے جن کی تلا ش جاری ہے، لوگ اپنی مدد آپ کے تحت ڈوبنے والوں کو تلاش کرنے میں مصروف ہیں۔

حادثے کے بعد انتظامیہ حرکت میں آگئی، اور متعلقہ اداروں نے ہرممکن اقدامات شروع کردیے، ریسکیو کا مرکز 50 کلومیٹر دور ہونے سےٹیمیں تاحال نہ پہنچ سکیں، لواحقین جاں بحق ہونے والے 8افراد کی میتیں ساتھ لے گئے۔

ضلعی انتظامیہ کے افسران جائے وقوعہ پر روانہ ہوگئے، عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ کشتی میں 30 افراد سوار تھے، کشتی آمدورفت کے لیے استعمال کی جاتی ہے تاہم آج سفر کے دوران اچانک حادثہ پیش آیا، کشتی میں سوار افراد جنازے میں شرکت کے لیے منچن آباد سے آ رہے تھے کہ ملہوشیخو کے مقام پر ان کی کشتی الٹ گئی۔

دوسری جانب ڈپٹی کمشنر مریم خان کا کہنا ہے کہ ملہوشیخو پر کشتی الٹنے کے واقعے کے بعد 6لاشیں نکال لی گئیں، 15سال کی لڑکی ارم  کی تلاش جاری ہے، کشتی الٹنے سے ڈوبنے والے 13افراد کو بچالیا گیا۔ وزیراعلیٰ پنجاب کی ہدایت پر خرم جہانگیر وٹو جائے وقوع پہنچ گئے، اس موقع پر ان کا کہنا تھا کہا متاثرین کو مالی امداد کے لیے وزیراعلیٰ پنجاب سے درخواست کروں گا۔

تربیلا ڈیم میں کشتی الٹ گئی، 50 سے زائد افراد ڈوب گئے

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو ہرمکن اقدامات کرنے کی ہدایت کردی اور واقعے سے متعلق مکمل رپورٹ پیش کرنے کا حکم دیا ہے۔

یاد رہے کہ رواں سال مئی میں دریائے سندھ میں کشتی الٹنے سے 6 افراد مارے گئے تھے۔ اس سے قبل اپریل میں خیبرپختونخوا میں واقع تربیلا ڈیم میں مسافروں سے بھری کشتی الٹنے سے درجنوں افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں