The news is by your side.

Advertisement

مسئلہ کشمیر کے حوالے سے سفارت کاری میں تبدیلی کی ضرورت ہے،شیریں مزاری

اسلام آباد: وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری کا کہنا ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے سفارت کاری میں تبدیلی کی ضرورت ہے۔

تفصیلات کے مطابق وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق شیریں مزاری نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ثقافت کشمیریوں پر مظالم کو اجاگر کرنے کا ذریعہ ہے۔

شیریں مزاری کا کہنا تھا کہ بھارتی جبرکو اجاگر کرنے میں انسانی حقوق کی تنظیموں کا اہم کردار ہے،کشمیریوں کی جدوجہد انصاف پرمبنی ہے۔وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق نے کہا کہ بھارتی قابض فوج خواتین کی بےحرمتی کو بطور ہتھیار استعمال کر رہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مسئلہ کشمیر کے حوالے سے سفارت کاری میں تبدیلی کی ضرورت ہے۔ وفاقی وزیر نے خطاب کے دوران فلسطینیوں کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ان کی کاز انصاف کی کاز ہے۔

شیریں مزاری کا اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق کو خط

یاد رہے کہ گزشتہ ماہ شیریں مزاری نے اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق کو خط لکھا تھا جس میں انہوں نے مقبوضہ کشمیر کی آبادی کا تناسب بدلنے کے عمل کو رکوانے کا مطالبہ کیا تھا۔

خط میں کہا گیا تھا کہ بھارت کا 5 اگست 2019 کا اقدام غیر قانونی ہے،انسانی حقوق کا ادارہ بھارتی اقدام غیر قانونی قرار دے چکا ہے، اقوام متحدہ کا ادارہ مقبوضہ کشمیر پر 2 رپورٹس جاری کرچکا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں