قربانی کا گوشت کھانے میں بے احتیاطی، ہزاروں مریض اسپتالوں میں داخل
The news is by your side.

Advertisement

قربانی کا گوشت کھانے میں بے احتیاطی، ہزاروں مریض اسپتالوں میں داخل

لاہور : عیدالاضحیٰ پر شہریوں کی بسیار خوری کا سلسلہ جاری ہے، جس کے باعث سینکڑوں افراد ڈائریا سمیت مختلف بیما ریوں کا شکار ہوکر اسپتال پہنچ گئے جبکہ طبی ماہرین نے شہریوں کو کھانے پینے میں احتیاط کا مشورہ دیا تھا۔

تفصیلات کے مطابق عیدالاضحیٰ پر قربانی کا گوشت کھانے میں بے احتیاطی کی وجہ سے شہری بڑی تعداد میں گیسٹرو، ڈائریا اور فوڈ پوائزنگ کا شکار ہوگئے۔

اسپتال انتظامیہ کا کہنا ہے کہ عید میں سرکاری اسپتالوں میں گیسٹرو سے متاثرہ 7ہزار500 سے زائدمریض پہنچے، میو اسپتال میں 1500 سے زائد مریضوں اور جناح اسپتال میں 1400 سے زائد مریض پیٹ خراب ہونے پر لائے گئے جبکہ سروسزاسپتال میں 1700، گنگا رام 1350، شیخ زید میں 1130مریض لائے گئے۔

انتظامیہ کے مطابق گیسٹرو کے متعدد مریضوں کو ابتدائی طبی امداد کے بعد ڈسچارج کردیا گیا ہے۔

طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ عیدالاضحیٰ پر گوشت کا بے دریغ استعمال ڈائیریا اور ہیضہ سمیت پیٹ کی بیماریوں کا باعث بن رہا ہے، شہری گوشت کھانے میں احتیاط برتیں۔

ایم ایس جناح اسپتال ڈاکٹر عاصم حمید طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ برسات اور حبس کے موسم میں گوشت کا استعمال کم سے کم کرنا چاہیے، شہری قربانی کا گوشت مسلسل کھانے کی بجائے سبزیوں اور دال کا بھی استعمال کریں.

خیال رہے طبی ماہرین نے شہریوں کو کھانے پینے میں احتیاط برتنے کا مشورہ دیا تھا جسے شہریوں نے نظر انداز کر دیا. جس کے باعث شہری بڑی تعداد میں بیمار ہو رہے ہیں۔

خیال رہے عیدالاضحیٰ پر بڑا گوشت، مرغن اور مصالحہ دار پکوان بہت زیادہ کھانے میں آتے ہیں تو ایسے میں معدے اور پیٹ کی تکلیف میں مبتلا ہوجانا ایک عام بات ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں