The news is by your side.

Advertisement

میرا ہونے والا بچہ خلائی مخلوق کی نسل سے ہوگا، خاتون کا دعویٰ

پیرس : مستقنل سے آنے کا دعویٰ کرنے والی خاتون نے خلائی مخلوق پر خود کو حاملہ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ ’ وہ ایک بچے کو جنم دے دی جو ایلین(خلائی مخلوق) اور انسان کی مشترکا اولاد ہوگی‘۔

تفصیلات کے مطابق مستقبل یا ماضی سے حال میں آنے کے مناظر عموماً فلموں میں تو دکھے جاتے ہیں لیکن یورپ میں ایک نوجوان خاتون نے حقیقت میں سنہ 3500 کا سفر کرکےواپس آج کے زمانے میں آنے کا دعویٰ کیا تھا جو اب نئے نئے انکشافات سے دنیا کو مزید حیرت میں مبتلا کررہی ہے۔

غیر معمولی اور پُر اسرار خبروں کےلیے مشہور یوٹیوب چینل ایپکس ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے نامعلوم خاتون نے دعویٰ کیا کہ اینڈرومیڈا نامی گلیکسی پر خلائی مخلوق نے اسے پکڑ لیا تھا۔

خاتون کا کہنا تھا کہ ’ مجھے گرفت میں لینے کے بعد خلائی مخلوق نے میرے ساتھ تعلق کیا جس کے باعث میں حاملہ ہوئی اورابسے پانچ ماہ بعد ایسے بچے کو جنم دوں گی جو انسان اور ایلین کی مشترکا اولاد ہوگا‘۔

ویڈیو کلپ میں خاتون نے اپنی کہانی سناتے ہوئے دعویٰ کیا کہ جب وہ 18 سال کی عمر میں یونیورسٹی آف پیرس میں زیر تعلیم تھی، تب مبینہ طور پر ٹائم مشین پر مشتمل ایک پُر اسرار کمرہ دریافت کیا اور یونیورسٹی کے دیگر عملے کی مدد سے ٹائم مشین پر مشتمل کمرے میں کام شروع کردیا۔

میں ٹائم ٹریولر مشین کے ذریعے سنہ 3500 میں گئی لیکن وہاں مجھے ایلینز نے پکڑلیا جس کے بعد دنیا وار زون میں تبدیل ہوچکی تھی، خاتون نے بتایا کہ مقناطیسی اور تابکاری لہروں کے باعث ہمارے واپس آنے کے راستے بھی بند ہوچکے تھے۔

نامعلوم خاتون کا کہنا تھا کہ ’وہاں ہمارے ساتھ پُرتشدد ، ذلت آ میز اور درد ناک سلوک کیا گیا اس لیے میں مزید تفصیل میں نہیں جانا چاہتی‘۔

یاد رہے کہ اس سے قبل مارچ میں ایک نوح نامی برطانوی نوجوان نے سنہ 2030 سے آنے کا دعویٰ کیا تھا تاہم ایک ہفتہ قبل نوح نے انکشاف کیا کہ مستقبل سے آنے کی ویڈیوجھوٹی تھی، نوح نے بتایا کہ اصل میں وہ ایک یوٹیوبرڈینس بل ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں