The news is by your side.

سندھ کے بڑے اسپتالوں میں کرونا وارڈز مکمل فعال رکھنے کی ہدایت جاری

کراچی: صوبہ سندھ کے بڑے اسپتالوں میں کرونا وارڈز مکمل فعال رکھنے کی ہدایت جاری کر دی گئی۔

تفصیلات کے مطابق بدھ کو وزیر صحت و بہبود آبادی سندھ ڈاکٹر عذرا پیچوہو کی زیر صدارت کرونا وبا کی صورت حال پر اجلاس منعقد ہوا، بریفنگ میں بتایا گیا کہ 24 گھنٹوں میں کرونا کیسز کی شرح 5.4 فی صد ریکارڈ کی گئی ہے۔

اجلاس میں صوبائی وزیر صحت سندھ نے ہدایت کی کہ سندھ کے بڑے اسپتالوں میں قائم کرونا وارڈز کو ہر صورت فعال رکھا جائے، جناح، سول، ڈاؤ، لمس اور دیگر اسپتالوں میں قائم کرونا واڈر میں وینٹی لیٹرز اور آکسیجن کی فراہمی کو بھی یقینی بنایا جائے۔

ڈاکٹر عذرا پیچوہو نے ہدایت کی کہ موجودہ صورت حال کو دیکھتے ہوئ کرونا ٹیسٹ کی شرح کو بڑھانے کی ضرورت ہے، اور جو مثبت کیسز سامنے آ رہے ہیں ان کے ساتھ رابطے میں رہا جائے۔

انھوں نے کہا کہ فی الحال ایسی صورت حال نہیں کہ کوئی لاک ڈاؤن تجویز کیا جائے، شہری کرونا ایس او پیز پر عمل کرتے رہیں، شہریوں کے لیے ضروری ہے کہ وہ ویکسین کے دونو ڈوز لگوانے کی صورت میں بوسٹر ڈوز بھی لگوائیں اور ماسک پہنیں۔

انھوں نے کہا کرونا سے صحت یاب ہونے کی باوجود صحت کے مسائل بہت سے کا خدشہ رہتا ہے، موذی امراض میں مبتلا افراد میں کرونا وائرس سے پیچیدگیاں رپورٹ کی گئی ہیں، اس لیے وائرس کی جینومک پروفائلنگ کے لیے بھی نتائج حاصل کیے جائیں تا کہ وائرس کے اثرات کو سمجھا جا سکے۔

وزیر صحت نے یہ ہدایت بھی کی کہ جو لوگ بوسٹر کے لیے اہل ہو چکے ہیں ان کو بذریعہ فون کال آگاہ کیا جائے، جو افراد ویکسینیشن سینٹر تک نہیں پہنچ سکتے ان کو گھر تک ویکسین کی سہولت مہیا کی جائے۔

کرونا کیسز کی صورت حال

صوبے میں کووِڈ کے لیے مقرر فوکل پرسن ڈاکٹر سہیل شیخ نے اجلاس کو بتایا گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا کے 248 مثبت کیسز سامنے آئے ہیں، اس دوران 4582 ٹیسٹ کیے گئے، جن میں مثبت کیسز کہ شرح 5.4 فی صد ریکارڈ کی گئی۔

اجلاس کو بتایا گیا کہ اس وقت صوبے میں 2947 کرونا کے فعال کیسز ہیں، جن میں سے 2908 افراد ہوم آئسولیشن میں ہیں جب کہ 39 افراد اسپتال میں زیر علاج ہیں۔

بریفنگ کے مطابق کراچی میں کرونا مثبت کیسز کی شرح 9.21 فی صد، حیدر آباد میں 0.16 فی صد، جب کہ سندھ کے باقی اضلاع میں شرح 0.68 فی صد رہی۔

سندھ میں 12 سال سے زائد عمر کی ٹارگٹڈ 34.27 ملین آبادی کو کرونا کے دونوں ڈوز لگائے جا چکے ہیں، مجموعی طور پر سندھ میں 34.66 ملین آبادی کو کرونا ویکسین کے دونوں ڈوز لگائے جا چکے ہیں، جب کہ سندھ میں 2 ڈوز لگوانے والوں کی مجموعی شرح 101 فی صد ہے، اور اب تک سندھ میں ایک کروڑ افراد بوسٹر ڈوز لگوا چکے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں