The news is by your side.

توشہ خانہ ریفرنس: عمران خان کی 3 ہفتے کا وقت دینے کی استدعا مسترد

اسلام آباد : الیکشن کمیشن نے توشہ خانہ ریفرنس میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان 3 ہفتے کا وقت دینے کی استدعا مسترد کردی۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن میں چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان سے متعلق توشہ خانہ ریفرنس کی سماعت ہوئی۔

چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں 5رکنی کمیشن نے سماعت کی، عمران خان کے وکیل بیرسٹرعلی ظفر دوسری سماعت میں بھی پیش نہ ہوئے ، علی ظفرکی جانب سےمعاون وکیل گوہرخان پیش ہوئے۔

عمران خان کے وکیل نے جواب جمع کرانے کیلئے 3 ہفتے کا وقت مانگ لیا اور کہا اکائونٹنٹ سے تمام تفصیلات لینے میں وقت لگے گا۔

بیرسٹرگوہر کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن ریفرنس پر 90 دن میں فیصلےکاپابندہے، گوشواروں پرمبنی دستاویزات حاصل کرنے کیلئے وقت درکارہے۔

عمران خان کے وکیل نے کہا کہ جائزہ لےرہےہیں کبھی کسی نےآئی فون اورگھڑیاں ظاہرکی ہیں یانہیں، دونوں ریفرنسز میں ایک ساتھ ہی جواب جمع کرایا جائے گا۔

جس پر چیف الیکشن کمشنر کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن میں ظاہرکردہ اثاثوں کی دستاویزات توعمران خان کےپاس ہوں گی۔

بیرسٹرگوہر نے بتایا کہ محسن شاہنوا رانجھا کے گوشوارے بھی جمع کرائیں گے کہ انہوں نے گھڑی ظاہرکی یا نہیں۔

جس پر وکیل پی ڈی ایم نے کہا کہ کسی کا کوئی اثاثہ ظاہر نہ کرنا عمران خان کو اثاثے چھپانے کا لائسنس نہیں دیتا۔

الیکشن کمیشن نے عمران خان کی 3 ہفتے کا وقت دینے کی استدعا مسترد کرتے ہوئے سماعت 29 اگست تک ملتوی کر دی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں