The news is by your side.

توشہ خانہ ریفرنس: عمران خان نے الیکشن کمیشن میں جواب جمع کرادیا

اسلام آباد : تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی جانب سے توشہ خانہ ریفرنس پر الیکشن کمیشن میں جواب جمع کرادیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن میں چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں پانچ رکنی بنچ نے عمران خان کیخلاف توشہ خانہ ریفرنس کی سماعت کی۔

عمران خان کے وکلا بیرسٹر علی ظفر اور بیرسٹر گوہر الیکشن کمیشن میں پیش ہوئے اور عمران خان کی جانب سے توشہ خانہ ریفرنس پر الیکشن کمیشن میں جواب جمع کرایا گیا۔

عمران خان کی جانب سے ساٹھ صفحات پر مشتمل جواب میں کہا گیا کہ گزشتہ حکومت نے ساڑھے تین سال کے دوران تین سو انتیس تحائف وصول کیے۔

جواب میں بتایا گیا توشہ خانہ کے اٹھاون تحائف عمران خان اور ان کی اہلیہ نے وصول کیے، تیس ہزار سے زائد مالیت کے کل چودہ تحائف سابق وزیراعظم اور اہلیہ کو ملے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ تمام تحائف ٹیکس ریٹرن اور اثاثوں کی تفصیلات میں موجود ہیں، توشہ خانہ تحائف کے چار یونٹ بیچے گئے، توشہ خانہ تحائف کے بدلے تین کروڑ سے زائد کی رقم ادا کی گئی۔ اس لیے ریفرنس گمراہ کن اور جھوٹ پر مبنی ہے۔

جواب میں کہا گیا کہ ریفرنس میں لگائے گئے الزامات بے بنیاد ہیں، ریفرنس کے ذریعے آئین کے آرٹیکل باسٹھ ون ایف کا اطلاق نہیں ہوتا۔

عمران خان کے وکیل بیرسٹر علی ظفر بولے تحائف کی ادائیگیوں کے ثبوت فراہم کردئیے ہیں ، آرٹیکل باسٹھ ون ایف کے تحت نااہلی الیکشن کمیشن کا نہیں عدلیہ کا اختیار ہے۔

جس پر چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ کمیشن کا دائرہ اختیار چیلنج کرنا ہے توالگ درخواست دائرکریں، بعد ازاں کیس کی سماعت 19 ستمبر تک ملتوی کر دی گئی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں