The news is by your side.

Advertisement

معیاری آڈٹ کے لئے تربیت یافتہ آڈیٹرز کی اہمیت سب سے زیادہ ہے، سروے رپورٹ

کراچی : پاکستان میں آڈیٹرز کے معیار کے بارے میں کئے گئے آڈٹ اوور سائٹ بورڈ کے سروے کے تنائج کے مطابق ایک معیاری آڈٹ کے اہم عوامل میں سب سے زیادہ اہمیت آڈٹ کرنے والے منیجرز اور ٹرینی آڈیٹرز کی ہوتی ہے ۔

زیادہ تر آڈیٹرز کا خیال ہے کہ پاکستان میں آڈٹ منیجرز اور ٹرینی آڈیٹرز کو بہتر معاوضہ ادا کیا جاتا ہے ، آڈٹ اوور سائٹ بورڈ کی جانب سے حال ہی میں کئے گئے اپنی نوعیت کے اس پہلے سروے میں ملک بھر سے ایک102آڈٹ فرموں کے296 آڈیٹرز کو بھیجا گیا جبکہ65فیصد نے اپنی رائے کا اظہار کیا۔

آڈٹ کمپنیوں کے حوالے سے 84 فیصد کی رائے تھی کہ آڈٹ کمیٹی کی رپورٹ کو کمپنی کی سالانہ رپورٹ میں شامل کیا جانا چاہیے جبکہ53 فیصد کا کہنا تھا کہ آڈٹ کمیٹی کو اکاونٹنگ کی ضروری سمجھ بوجھ نہیں ہوتی اور98فیصدنے آڈٹ کمیٹیوں کے ارکان کی تربیت کی ضرورت سے اتفاق کیا۔

سروے کے مطابق 80 فیصد آڈیٹرز، کمپنیوں کی جانب سے ادا کی جانے والی آڈٹ کی فیس سے مطمئن نہیں، سروے میں شامل ہونے والے آڈیٹرز نے رسک مینجمنٹ کے سلسلے میں آڈٹ کمیٹیوں کے کردار پر زور دیا ۔

انہوں نے تجویز کیا کہ رسک رجسٹر آڈٹ کمیٹی کو ہی ترتیب دینا چاہیے اور وقتاً فوقتاً اس کا جائزہ لیتے رہنا چاہیے ، آڈٹ اوور سائٹ بورڈ، آڈٹ کے شعبے کا خودمختار ریگولیٹر ہے جو کہ2016 میں ایکٹ آف پارلیمنٹ کے ذریعے قائم کیا گیا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں