site
stats
عالمی خبریں

ڈونلڈ ٹرمپ نےقائم مقام اٹارنی جنرل سیلی یٹس کوبرطرف کردیا

واشنگٹن : امریکی قائم مقام اٹارنی جنرل سیلی یٹس کومسلم ممالک پرپابندی کےحکم نامے کےدفاع سےانکارکرنے پر عہدے سے برطرف کردیاگیا۔

تفصیلات کےمطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے امریکی قائم مقام اٹارنی جنرل کوامیگریشن آرڈر کی حمایت نہ کرنے پر عہدے سے فارغ کردیاگیا۔

امریکی قائم مقام اٹارنی جنرل سیلی یٹس نے ملک کے محکمہ انصاف کو کہا تھا کہ وہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے امیگریشن آرڈر کی حمایت نہ کرے۔

اٹارنی جنرل سیلی یٹس نےکہاتھاکہ وہ اس پر قائل نہیں کہ ایگزیکٹو آرڈر قانونی ہے،لیکن محکمہ انصاف صدارتی حکم نامے کے دفاع میں دلائل پیش نہیں کرے گا۔

سیلی یٹس نے محکمہ انصاف کو مراسلہ لکھاتھاجس میں انہوں نےکہاتھاکہ میری یہ ذمہ داری ہے کہ میں اس بات کو واضح کروں کہ محکمہ انصاف کی پوزیشن قابلِ دفاع نہیں ہے بلکہ اس سے بھی آگاہ کروں کہ اس قانون کے بارے میں ہمارا کیا نقطہ نظر ہے۔

قائم مقام اٹارنی جنرل کو سابق صدر براک اوباما نے اس عہدے پر تعینات کیا تھا۔اب ان کی جگہ صدر ٹرمپ کے نامزد کردہ اٹارنی جنرل مسٹر جیف سیشنز لیں گے۔

مزید پڑھیں:امریکی صدر کے تارکین وطن اور 7 مسلم ممالک کے داخلے پر پابندی کے حکم نامہ پر دستخط

یاد رہےکہ تین روز قبل ڈونلڈ ٹرمپ نے تارکین وطن اور 7مسلم ممالک کے شہریوں کی امریکہ میں داخلے پر پابندی کے حکم نامہ پر دستخط کیے تھے۔

مزید پڑھیں: ڈونلڈ ٹرمپ کا7مسلم ممالک پرپابندی کا حکم نامہ‘عدالت نے عملدرآمد روک دیا

واضح رہےکہ دوروز قبل نیوریاک کی عدالت نے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے سات مسلمان ممالک اور تارکین وطن کےحوالے سے پابندی کے حکم نامے پر عمل درآمد روک دیاتھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top