spot_img

تازہ ترین

’فوج نے مینڈیٹ کے مطابق الیکشن کیلیے محفوظ ماحول فراہم کیا‘

کورکمانڈرز کانفرس کے شرکأ نے عام انتخابات میں الیکشن...

وزیراعظم شہباز شریف کی کابینہ میں کون کون شامل ہوگا ؟ بڑے نام سامنے آگئے

اسلام آباد : وزیراعظم شہباز شریف کی وفاقی کابینہ...

بانی پی ٹی آئی کی رہائی کیلیے قرارداد قومی اسمبلی میں جمع

پاکستان تحریک انصاف کے بانی کو رہا کرنے کی...

انقرہ خودکش حملہ کس نے کیا؟

کرد مسلح گروپ PKK نے ترک دارالحکومت انقرہ میں ہونے والے خودکش حملے کی ذمہ داری قبول کر لی۔

ترکی اور اس کے مغربی اتحادیوں کی طرف سے کالعدم قرار دی گئی کردستان ورکرز پارٹی (PKK) نے انقرہ میں خودکش بم دھماکے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔

PKK نے فرات نیوز ایجنسی کو بتایا ہماری امر بریگیڈ کی ایک ٹیم کی طرف سے ترک وزارت داخلہ کے خلاف کارروائی کی ہے۔

PKK، ترکی، یورپی یونین اور امریکا میں ایک نامزد "دہشت گرد” گروپ نے 1984 میں ترک ریاست کے خلاف ہتھیار اٹھائے تھے۔

خودکش حملے کے باوجود پارلیمنٹ کا اجلاس، اردوان کا اہم خطاب

PKK کا مقصد ایک ایسے علاقے میں ایک آزاد سوشلسٹ کرد ریاست بنانا ہے جس پر وہ کردستان کا دعویٰ کرتا ہے ایک ایسا علاقہ جس میں جنوب مشرقی ترکی کے کچھ حصے شامل ہیں۔

ترکی کو 2015 اور 2017 کے درمیان کئی مہلک بم دھماکوں کا نشانہ بنایا گیا، کچھ داعش (ISIS) کے ذریعے، اور کچھ کرد جنگجوؤں کے ذریعہ جو خود مختاری یا آزادی میں اضافہ چاہتے ہیں۔

ان حملوں کے بعد، جن میں 500 سے زیادہ عام شہری اور سکیورٹی اہلکار ہلاک ہوئے ترکی نے شام اور شمالی عراق میں کرد جنگجوؤں کے خلاف سرحد پار فوجی کارروائیاں شروع کیں، جبکہ کرد سیاستدانوں، صحافیوں اور کارکنوں کے خلاف کریک ڈاؤن بھی کیا۔

Comments

- Advertisement -