The news is by your side.

اماراتی طلبہ کا تیار کردہ سیٹلائٹ خلا میں پہنچ گیا

دبئی : متحدہ عرب امارات کے طلبہ کے ہاتھوں تیار کردہ چھوٹا سیٹلائٹ امریکی ریاست ورجینیا کے مڈ اٹلانٹک ریجنل اسپیس پورٹ سے خلا میں بھیج دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ’مائی سیٹ 1‘ نامی یہ چھوٹا سیٹلائٹ خلیفہ یونی ورسٹی کے طالب علموں نےتیار کیا ہے ۔ اسے آج یواے ای کی مقامی وقت کے مطابق دوپہر ایک بج کر دو منٹ پربین الاقوامی خلائی اسٹیشن کی جانب روانہ کیا گی ہے۔

بتایا جارہا ہے کہ اس سیٹلائٹ نے 15 نومبر کو خلا میں لانچ ہونا تھا تاہم ورجینیا میں موسم کی خرابی کے سبب یہ منصوبہ دو دن آگے کردیا گیا۔ لانچ کے چار منٹ بعد راکٹ جہاز سے کامیابی سے الگ ہوگیا اور یہ مصنوری سیارہ 1 بج کر 11 منٹ پر خلا کے مدار میں پہنچ چکا تھا۔ اسے بین الاقوامی خلائی اسٹیشن تک پہنچنے میں دو دن لگیں گے۔

اس سیٹلائٹ کو تعلیمی مقاصد کے لیے تیار کیا گیا ہے اس کے ساز و سامان میں دو چیزیں انتہائی اہمیت کی حامل ہیں ، ایک زمین کے مشاہدے کے لیے نصب کیا گیا کیمرہ اور دوسری بیٹری جسے مصدر انسٹی ٹیوٹ میں تیار کیا گیا ہے۔ اسکا مجموعی وزن 700 کلو گرام ہے۔

یاد رہے کہ یہ یو اے ای کی جانب سے خلا میں بھیجا جانے والا دوسرا پراجیکٹ ہے۔ اس سے قبل گزشتہ ماہ مکمل طور پر یو اے ای میں تیار کردہ خلیفہ سیٹ زمیں کے مدار جاپانی خلائی ادارے کے تعاون سے بھیجا گیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں