برطانیہ: شراب نوشی کے باعث ہلاکتوں کی شرح میں خطرناک اضافہ UK alcohol
The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ: شراب نوشی کے باعث ہلاکتوں میں تشویش حد تک اضافہ

لندن : برطانیہ کے نوجوان شراب نوشی کی بری لت میں تیزی سے مبتلا ہونے لگے، ایک سال کے دوران خطرناک ہلاکتیں ریکارڈ کی گئیں۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی نوجوانوں کی شراب نوشی کے باعث ہلاکتوں میں تیزی سے ہونے والے اضافے پر قومی شماریات کے ادارے نے تحقیقاتی رپورٹ جاری کردی، تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق شراب نوشی کے باعث برطانوی خواتین سب سے زیادہ ہلاک ہوئی ہیں۔

برطانیہ کے قومی شماریات کے ادارے کے اعداد و شمار کے تحت ایک لاکھ افراد میں 12 اعشاریہ 2 فیصد سالانہ زندگی کی بازی ہارتے تھے جبکہ صرف سنہ 2017 میں شراب نوشی کے لت میں مبتلا ہونے والے 7 ہزار 697 برطانوی شہریوں کو اپنی زندگیوں سے ہاتھ دھونا پڑا تھا۔

تحقیقاتی رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ سنہ 2008 سے شراب نوشی کے باعث موت کی شرح 5 فیصد اضافے کے بعد1 لاکھ افراد پر 12 اعشاریہ 7 فیصد ہوگئی ۔

برطانوی شماریاتی ادارے کی تحقیقاتی رپورٹ کے مطابق اگر چہ اب بھی شراب نوشی کے نتیجے میں برطانوی مردوں کی اموات خواتین کی نسبت دو گناہ زیادہ ہیں لیکن سنہ 2008 سے خواتین کی موت میں ہوش ربا اضافہ ہوا ہے۔

این ایچ ایس ڈیجیٹل ہیلتھ کی برطانیہ سے متعلق سروے رپورٹ منگل کے روز جاری کی گئی تھی جس کے مطابق ہلاک ہونے والی خواتین میں زیادہ تر بھاری بھرکم(موٹی) جسامت کی حامل تھیں۔

سروے رپورٹ میں بتایا گیا ہےسنہ 2017 میں ہلاک ہونے والے افراد میں 64 فیصد برطانوی شہری ایسے تھے جن کا وزن زیادہ تھا۔

سروے رپورٹ کے مطابق برطانیہ کے 17 فیصد بچے جبکہ ہر 10 میں 9 افراد ایسے ہیں جو تمباکو نوشی، شراب نوشی یا فروٹ اور سبزیوں کا استعمال نہ کرنے جیسے بری عادات میں مبتلا ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں