بریگزٹ: امیگریشن میں یورپی یونین کے شہریوں کو ترجیح نہیں دی جائے گی -
The news is by your side.

Advertisement

بریگزٹ: امیگریشن میں یورپی یونین کے شہریوں کو ترجیح نہیں دی جائے گی

لندن : برطانوی کابینہ نے اتفاق کیا ہے کہ بریگزٹ کا عمل مکمل ہونے کے بعد یورپی یونین سے برطانیہ کام کی تلاش میں آنے والوں کو کسی قسم کی خصوصی ترجیح نہیں دی جائے گی اور ان پر بھی دیگر ممالک کی طرح امیگریشن کے قواعظ و ضوابط لاگو ہوں گے۔

تفصیلات کے مطابق برطانوی پارلیمنٹ کی آزاد امیگریشن ایڈوائزری کمیٹی کی جانب سے یہ تجاویز پیش کی گئیں جن پر اتفاقِ رائے کیا گیا، ان تجاویز کو لیبر پارٹی کی حمایت بھی حاصل تھی۔

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کے مطابق کیبنٹ نے قومیت کے بجائے صلاحیتوں کی بنیاد پر سسٹم تشکیل دینے کے فیصلے کی حمایت کی ہے اور کسی نے بھی اس کی مخالفت نہیں کی ، تاہم کچھ ارکان نے یہ خوف ظاہر کیا ہے کہ یورپین یونین سے آنے والے کم صلاحیت یافتہ افراد پر بھی پابندی سے نقصان کا اندیشہ ہے۔

یاد رہے کہ برطانوی وزیراعظم تھریسا مے اس عزم کا اظہار کرچکی ہیں کہ بریگزٹ کے بعد یورپ سے برطانیہ بغیر کسی کے پابندی کے آنے والوں کی روک تھام کی جائے گی، اس معاملے پر بی بی سی کی سیاسی امور کی ایڈیٹر کا کہنا ہے کہ امیگریشن کی اس آزادی کے خاتمے پر تھریسا مے کسی قسم کی کوئی گفت وشنید کے لیے تیار نہیں ہیں۔

دوسری جانب لیبر پارٹی کی جانب سے حکومت پر تعینات شیڈو بریگزٹ سیکرٹری سر کائر اسٹارمر کا کہنا ہے کہ امتیازی سلوک کی روک تھام کے لیے ایک منصفانہ سسٹم ضروری ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں