The news is by your side.

Advertisement

برطانیہ کرونا وائرس کی نئی قسم کا پھیلاؤ روکنے میں ناکام، سائنس دان کا حکومت کو انتباہ

لندن: برطانیہ میں ٹیئر 5 لاک ڈاؤن کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے، کیوں کہ حکومت کرونا وائرس کی نئی قسم کا پھیلاؤ روکنے میں ناکام رہی ہے، دوسری طرف ایک برطانوی سائنس دان نے حکومت کو متنبہ کیا ہے کہ مزید سخت اقدامات نہ کیے گئے تو تباہی کا سامنا ہو سکتا ہے۔

برطانوی میڈیا نے حکومتی ذرایع سے دعویٰ کیا ہے کہ ملک میں اب ٹیئر 5 لاک ڈاؤن کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے، ماہرین کا کہنا ہے کہ ٹیئر 4 کرونا وائرس کی نئی قسم کا پھیلاؤ روکنے میں ناکام ہو رہا ہے۔

20 دسمبر کو لندن اور دیگر علاقوں میں ٹیئر 4 لاک ڈاؤن نافذ کیاگیا تھا، حکومت نے اسکول بندکرنے کی تجویز پر بھی غور شروع کر دیا ہے۔

ادھر آکسفورڈ کے برطانوی سائنس دان پروفیسر اینڈریو ہیورڈ نے حکومت کو متنبہ کیا ہے کہ کرونا کی نئی قسم کے پھیلاؤ کو روکنا انتہائی ضروری ہے، نئے سال کے آغاز پر سخت حکومتی اقدامات کیے جائیں، اگر برطانیہ نے مزید سخت اقدامات نہ کیے تو تباہی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

برطانوی سائنس دان کا کہنا تھا کرونا میں اضافے کو روکنے کے موجودہ اقدامات نا کافی ہیں، حکومت ملک میں جاری پابندیوں کا کل دوبارہ جائزہ لے گی، ایسے میں مزید سخت اقدامات کی ضرورت ہے۔

دوسری طرف این ایچ ایس کے سی ای او کا کہنا ہے کہ برطانوی اسپتالوں میں پہلی لہر کی نسبت مریضوں کی تعداد اب زیادہ ہے، سائمن اسٹیونز نے کہا کہ گزشتہ روز ریکارڈ 41385 کرونا کیسز سامنے آئے اور اسپتالوں میں ایک دن میں 20426 کرونا کے شکار مریضوں کا علاج کیاگیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں