site
stats
اہم ترین

یروشلم سے متعلق امریکی فیصلے کو اقوام متحدہ نے مسترد کردیا

نیویارک : اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرنے کے امریکی فیصلے کو کثرت رائے سے مسترد کردیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اہم اجلاس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے یروشلم کو اسرائیل کا دارالحکومت تسلیم کرتے ہوئے تل ابیب سے امریکی سفارت خانہ یروشلم منتقل کرنے کے فیصلے کے خلاف قرار داد کو کثرت رائے منظور کرلیا ہے۔

ذرائع کے مطابق امریکی متنازع فیصلے کے خلاف قرارداد کے حق میں 128 اور مخالفت میں 9 ووٹ ڈالے گئے جب کہ 35 ممالک نے جنرل اسمبلی اجلاس میں رائے دہی سے اجتناب کیا یوں کثرت رائے سے امریکی فیصلے کو مسترد کردیا گیا جب کہ امریکا کے اہم اتحادیوں نے بھی قرارداد کے حق میں ووٹ دیا۔


  اسی سے متعلق : امریکا جان لے ! دنیا برائے فروخت نہیں، ملیحہ لودھی


یاد رہے امریکا کے متنازع فیصلے کے خلاف قرار داد ترکی اور یمن نے پیش کی تھی جس پر امریکا اور اسرائیل نے سخت موقف اپناتے ہوئے کہا تھا کہ امریکا اقوام متحدہ کو مقدم رکھتا ہے اور ہمیشہ دنیا کو مدد فراہم کرتا ہے اس لیے اقوام متحدہ کو امریکی فیصلے کا احترام کرنا چاہیے.

 

 

 

 خیال رہے کہ  اقوام متحدہ میں امریکا کی مستقل مندوب نکی ہیلی نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے ایک دھمکی آمیز پیغام میں امریکا کے خلاف ووٹ دینے والے رکن ممالک کی فہرست پر نظر رکھنے اور سخت ردعمل دینے کا عندیہ دیا تھا۔

 

 یہ بھی پڑھیں : امریکا نے یروشلم کو اسرائیلی دارالحکومت تسلیم کرلیا

جس کے بعد امریکی صدر ٹرمپ نے بھی امریکا مخالف ووٹ دینے والے ممالک کی امداد میں کٹوتی یا مستقل طور پر امداد بند کردینے کی دھمکی دی تھی تاہم ان کی دھمکیاں کسی کام نہیں آئیں اور فیصلہ ٹرمپ کے مخالف آیا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top