عراق میں امریکی فوجی سرگرمیاں مزید موثر بنائی جائیں گی: وزارت دفاع کا بیان
The news is by your side.

Advertisement

عراق میں امریکی فوجی سرگرمیاں مزید موثر بنائی جائیں گی: امریکا

واشنگٹن: قائم مقام امریکی وزیر دفاع پیٹرک شیناہن کا کہنا ہے کہ عراق میں عسکریت پسندوں کے خلاف امریکی فوجی سرگرمیاں مزید موثر بنائی جائیں گی۔

تفصیلات کے مطابق اپنے پہلے دورہ عراق کے موقع پر قائم مقام امریکی وزیر دفاع کا کہنا تھا کہ ہم عراق کی سالمیت کا احترام کرتے ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق عراقی وزیراعظم کو مخاطب کرتے ہوئے پیٹرل شیناہن کا کہنا تھا کہ وہ امریکی کردار کو تسلیم کریں، وسائل کی ترسیل کا سلسلہ بھی جاری ہے۔

انہوں نے کہا کہ عراقی فوج کی قابلیت کو مزید بڑھانے کے لیے حکمت عملی پر غور کررہے ہیں، امریکی فوج کی تعداد محدود کرنے سے متعلق عراقی پارلیمنٹ کی تجاویز سے آگاہ ہیں۔

خیال رہے کہ قائم مقام امریکی وزیر دفاع غیر اعلانیہ دورہ پر بغداد پہنچ گئے، جہاں انہوں نے وزیراعظم عادل عبدالمہدی سے ملاقات کی اور مختلف موضوعات پر تبادلہ خیال کیا۔

اس دورے میں شیناہن نے عراقی صدر کے ساتھ ساتھ اعلیٰ عراقی دفاعی عہدیداروں سے ملاقاتیں بھی کیں۔ واضح رہے کہ اس وقت بھی عراق میں قریب پانچ ہزار امریکی فوجی موجود ہیں۔

ایک ہفتے میں شام و عراق سے داعش کا مکمل خاتمہ کردیں گے، ٹرمپ

خیال رہے کہ گذشتہ ہفتے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے کہا تھا کہ ایک ہفتے میں دولت اسلامیہ (داعش) کا خاتمہ کرکے شام اور عراق کو مکمل طور پر آزاد کرایا جائے۔

ڈونلڈ ٹرمپ نے یہ بھی کہا تھا کہ داعش کی خلافت ختم کردی لیکن اس کے چھوٹے چھوٹے گروپ خطرناک ہوسکتے ہیں، غیر ملکی جنگجوؤں کو امریکا پہنچنے سے روکنا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں