مہاجرین کے خلاف امریکی حکمت عملی، غیر قانونی طور پر امریکا داخل ہونے پر پابندی عائد
The news is by your side.

Advertisement

مہاجرین کے خلاف سخت حکمت عملی، غیر قانونی طور پر امریکا میں داخل ہونے پر پابندی عائد

واشنگٹن: امریکا نے مہاجرین کے خلاف سخت حکمت عملی اپنا لی، غیر قانونی طور پر امریکا میں داخل ہونے پر پابندی عائد کردی گئی۔

تفصیلات کے مطابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پابندی سے متعلق خصوصی حکم نامے پر دستخط کردیا جس کے تحت لاطینی امریکی مہاجرین میکسیکو کے ساتھ لگنے والی امریکی سرحد کو عبور نہیں کرسکیں گے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اس حکم کے تحت غیر قانونی طور پر سرحد عبور کرنے والے مہاجرین امریکا داخل ہونے کے بعد سیاسی پناہ حاصل نہیں کر سکیں گے۔

اس سے قبل امریکا نے مہاجرین کے لیے ملک میں داخلے پر نئے قواعد وضوابط متعارف کرائے تھے۔

نئے ضوابط کے مطابق  صرف وہ مہاجرین امریکا میں داخل ہوسکیں گے جو حکام کے مقرر کردہ داخلے کے مقامات سے سرحد عبور کریں گے۔

ٹرمپ کی میکسیکو کی سرحد پر تارکین وطن کو گولی مارنے کی دھمکی

خیال رہے کہ گذشتہ ہفتے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے پڑوسی ملک میکسیکو کی سرحد سے غیرقانونی طور پر امریکا میں داخل ہونے والے تارکین وطن کو سنگین نتائج کی دھمکی دی تھی۔

انہوں نے کہا تھا کہ میکسیکو کی سرحد سے غیرقانونی طور پر امریکا میں داخل ہونے والے تارکین وطن کو دھمکی دیتے ہوئے کہا ہے کہ میکسیکو کی سرحد سے دراندازی کرنے والے امریکی فوج پر حملہ کرنے والوں پر گولیاں چلائی جائیں گی۔

یاد رہے کہ گذشتہ ہفتے ہی امریکی محکمہ دفاع نے کہا تھا کہ میکسیکوسے متصل سرحد پر5 ہزارسے زائد فوج تعینات ہوگی، سرحد پرفوجیوں کواسلحہ، ہیلی کاپٹراوردیگرآلات کی فراہمی جاری ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں