The news is by your side.

Advertisement

ٹرمپ کا سعودی عرب اور یواےای میں امریکی فوجی کمک بھیجنے کا اعلان

واشنگٹن: ایران سے حالیہ کشیدگی کے تناظر میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں امریکی فوجی کمک بھیجنے کا اعلان کردیا۔

تفصیلات کے مطابق امریکا نے فوجی دستے سعودی عرب اور یو اے ای بھیجنے کا اعلان کردیا، ٹرمپ نے تیل تنصیبات پر حملوں کے بعد فوج بھیجنے کی منظوری دی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق پینٹاگون کا کہنا ہے کہ امریکی فوج کی اضافی تعیناتی دفاعی نوعیت کی ہے، سعودی تیل تنصیبات کی نگرانی کے لیے میزائل ڈیفنس سسٹم نصب کررہے ہیں۔

امریکی وزیردفاع مارک تی اسپر کا کہنا ہے کہ عالمی معیشت، اصولوں اور اقدار کو ایران سے خطرات لاحق ہیں، خطے میں ایران کی پرتشدد سرگرمیوں میں نمایاں اضافہ ہوا ہے، سعودی عرب نے اہم انفراسٹرکچر کے تحفظ کیلئے عالمی مدد کی درخواست کی۔

امریکا اور ایران کو زبردستی مذاکرات کی میز پر نہیں لایا جاسکتا: فرانس

انہوں نے کہا کہ اضافی تعیناتی فضائی اور میزائل دفاعی نظام پر مرکوز ہوگی، سعودی عرب اور یواےای کی درخواست پر اضافی کمک کی منظوری دی گئی ہے، تعیناتی سے واضح پیغام دینا ہے کہ امریکا اتحادیوں کی حمایت کرتا ہے۔

وزیردفاع کا کہنا تھا کہ اس اقدام کا مقصد عالمی معیشت کیلئے درکار وسائل کی آزادانہ ترسیل یقینی بنانا ہے، سعودی عرب کو عسکری آلات کی فراہمی میں تیزی لارہے ہیں، خطے میں اپنے شہریوں اور مفادات کا تحفظ امریکا کی ذمہ داری ہے، ایرانی قیادت اپنی تباہ کن، خطےکو غیر مستحکم کرنے کی سرگرمیاں روکے۔

مشرق وسطیٰ میں امریکی اتحاد کے قیام پر ایران کی تنقید

مارک ٹی اسپر نے خبردار کیا کہ ایران پُرامن سفارتی راستے کا انتخاب کرے، عالمی معیشت، اصولوں کے تحفظ کی ذمہ داری اقوام عالم پر ہے، ایران کو طویل عرصے سے عالمی قوانین کی پاسداری کا کہہ رہے ہیں۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ٹرمپ واضح کرچکے ہیں کہ امریکا ایران سے تصادم نہیں چاہتا، ضرورت پڑی تو امریکا کے پاس دیگر عسکری آپشنز بھی موجود ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں