The news is by your side.

Advertisement

بھارت میں پرتشدد مظاہرے، اترپردیش میں 9 افراد ہلاک

نئی دہلی: بھارت میں مسلم مخالف متنازع قانون کے خلاف مظاہروں کا سلسلہ جاری ہے، اترپردیش میں پولیس گردی کے نتیجے میں 9 افراد ہلاک ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق بھارتی دارالحکومت نئی دہلی سمیت مختلف ریاستوں اور شہروں میں متنازع بل کے خلاف شہری سراپا احتجاج ہیں، ریاست اترپردیش میں پولیس کی فائرنگ اور تشدد سے 9 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ اب تک اترپردیش میں ہلاک مظاہرین کی تعداد 11 ہوگئی ہے۔ جبکہ دہلی میں نماز جمعہ کے بعد بڑی احتجاجی ریلی نکالی گئی، پولیس نے خواتین سمیت سیکڑوں افراد کو گرفتار کرلیا، مظاہرین پر آنسوگیس کی شیلنگ اور واٹرکینن کا بھی استعمال کیا گیا۔

مظاہرین نے متعدد گاڑیاں اور موٹرسائیکلیں نذرآتش کردیں، پولیس تشدد سے جامعہ ملیہ اور علی گڑھ یونیورسٹی کے متعدد طلبا زخمی ہوئے۔ لکھنو، منگلورو اور دہلی سمیت مختلف شہروں میں انٹرنیٹ اور موبائل سروس تاحال بند ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق اترپردیش میں اسکول اور کالج آج بند رہیں گے۔

متنازع ایکٹ، بھارت میں احتجاج، مودی ہٹاؤ مہم شروع، 14 افراد ہلاک

خیال رہے کہ گزشتہ روز جھڑپوں کے دوران لکھنو میں پولیس کی گولی لگنے سے احتجاج کرنے والا ایک شخص ہلاک متعدد افراد زخمی ہوئے تھے۔ دوسری جانب کولکتہ میں مغربی بنگال کی وزیراعلیٰ ممتا بینر جی نے پھر احتجاجی ریلی نکالی اور متنازع شہریت بل پر مودی حکومت کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں