The news is by your side.

Advertisement

وسیم اختر کی2مقدمات میں ضمانت منظور

کراچی :انسداد دہشت گردی کی عدالت نے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما اور میئر کراچی وسیم اختر کی 2مقدمات میں ضمانت منظور کرلی۔

تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی عدالت میں ایم کیو ایم بانی کی اشتعال انگیز تقریر میں سہولت کاری کے حوالے سے وسیم اختر پر قائم 2مقدمات کی سماعت ہوئی۔

وسیم اختر کےوکیل خواجہ نوید نے عدالت میں دلائل دیتے ہوئے کہا کہ وسیم اختر پر اشتعال انگیز تقاریر میں سہولت کاری کا الزام ہے لیکن جس تقریرکے حوالے سے ان کے خلاف ایف آئی آر درج ہے وہاں وسیم اختر موجود نہیں تھے۔

خواجہ نوید نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ میرے موکل کے خلاف بے بنیاد اور جھوٹے مقدمات ہیں لہذا انہیں ضمانت دی جائے۔عدالت نے وسیم اختر کی دومقدمات میں ایک ایک لاکھ روپے کی ضمانت منظور کرلی ہے۔

وسیم اختر کا کہنا تھا کہ میرے خلاف ہر واقعے پر 2،2 مقدمات قائم کر رکھے ہیں،مجھ پر 7 ایف آئی آرز ایک جیسی دفعات کے تحت ہیں اور اسی واقعہ کی ایک اور ایف آئی آر میں ضمانت بھی دی جا چکی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وسیم اختر پر اشتعال انگیز تقاریر میں سہولت کاری کے حوالے سے مختلف تھانوں میں 39 مقدمات درج کیے گئے تھے جن میں سے 36مقدمات میں انہوں نے ضمانت کروائی ہوئی ہے اور آج مزید2 مقدمات میں بھی ان کی درخواست ضمانت منظور کر لی گئی ہے۔

واضح رہے کہ اب میئر کراچی وسیم اختر پردہشت گردوں کے علاج معالجے میں معاونت کا ایک مقدمہ ہے جس میں ان کی ضمانت ہوناباقی ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں