The news is by your side.

Advertisement

کروناوائرس: یو اے ای میں افواہیں پھیلانے پر کیا سزا ہوگی؟

ابوظہبی: متحدہ عرب امارات میں کروناوائرس سے متعلق افواہیں پھیلانے اور اپنی طرف سے جھوٹی باتیں گڑھنے پر تقریباً 10 لاکھ درہم تک کا جرمانہ ہوسکتا ہے۔

غیرملکی خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وبائی مرض کروناوائرس سے متعلق دنیا بھر میں افواہیں بھی پھیلائی جارہی ہیں تاہم یو اے ای کے قانون کے تحت جھوٹی خبریں یا پھر افواہیں پھیلانے پر ملزم کو 10 لاکھ جرمانہ اور جیل کی سزا بھی ہوسکتی ہے۔ متعلقہ اداروں نے شہریوں کو خبردار کردیا۔

مذکورہ سزا کسی بھی موضوع کے حوالے سے من گھڑت باتیں آگے بڑھانے سمیت سوشل میڈیا کے ذریعے افواہیں پھیلانے والوں پر بھی لاگو ہوگی۔

خیال رہے کہ انٹرنیٹ اور سماجی رابطے کی مختلف ویب سائٹس کے ذریعے افواہیں جنگل کی آ گ کی طرح پھیل جاتی ہیں، درجنوں افراد انجانے میں بھی افواہوں کو آگے بڑھانے میں حصہ لے لیتے ہیں۔

کورونا وائرس، یو اے ای سے اچھی خبر آ گئی

شہریوں نے متحدہ عرب امارات میں افواہوں کے انسداد کا باقاعدہ مرکز قائم کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ کروناوائرس کے خطرے کے باعث یو اے ای میں سخت حکت عملی اپنائی جارہی ہے۔

کروناوائرس سے متاثرہ تمام ممالک سفری پابندیاں سخت کررہے ہیں تاہم یو اے ای میں ثبت ویزہ رکھنے والے مسافروں کو خصوصی رعایت حاصل ہے۔ ان کے ملک میں داخلے پر کوئی پابندی نہیں ہے۔

fb-share-icon0
Tweet 20

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں