The news is by your side.

Advertisement

پاکستان آئندہ 100 سال میں کیسا ہوگا ؟رپورٹ جاری

اسلام آباد : عالمی بینک کا کہناہے کہ پاکستان کو انسانی وسائل کی ترقی پر زیادہ سے زیادہ خرچ کرنا ہو گا اور معاشی شرح نمو میں اضافے کیلئے تجارتی اور ٹیکس اصلاحات کرنا ہوں گی۔

تفصیلات کے مطابق عالمی بینک کی جانب سے پاکستان پر رپورٹ ” پاکستان آئندہ سو سال میں کیسا ہوگا” جاری کردی گئی ہے۔

جس میں عالمی بینک کاکہنا ہے کہ پاکستان کو انسانی وسائل کی ترقی پرزیادہ سےزیادہ خرچ کرنا ہوگا  اور تجارت کے فروغ کیلئے ٹیرف سمیت دیگر رکاوٹیں ختم کرنےکی ضرورت ہے۔

عالمی بینک کے مطابق علاقائی تناؤ کی وجہ سےپاکستان کودفاع پرزیادہ خرچ کرناپڑرہاہے، علاقائی روابط کے فروغ سے دوہزار سنیتالیس تک معیشت میں تیس فیصد اضافہ کیاجاسکتاہے۔

علاقائی روابط کے فروغ سے 2047 تک معیشت میں تیس فیصد اضافہ کیاجاسکتاہے

رپورٹ میں بتایا گیاہے کہ ٹیکس وصولی میں اضافے کیلئے ٹیکس نیٹ بڑھاناہوگا اور زرعی شعبےکو بھی ٹیکس نیٹ میں لانے کی ضرورت ہے، پاکستان کے ٹیکس نظام میں ایسی خرابیاں ہیں جو ٹیکس چوری کی وجہ بنتی ہیں۔

رپورٹ کے مطابق پاکستان میں دو کروڑچھبیس لاکھ بچے اسکول نہیں جاتے اور ملک میں بچوں کی شرح اموات بلند ہے جبکہ پاکستان میں پانچ سال کے38فیصد بچے چھوٹے قد کا شکار ہیں۔

عالمی بینک کا کہنا ہے کہ آبی وسائل کے تحفظ کیلیے پانی کااستعمال مؤثر بنانے کی ضرورت ہے۔

فری مارکیٹ ہی پاکستان کے مستقبل کا فیصلہ کر سکتی ہے، ہاروگ شیفر


دوسری جانب عالمی بینک کے نائب صدر برائے جنوبی ایشیا ہاروگ شیفر نے خطاب میں کہا پاکستان کو اپنے انسانی وسائل پرزیادہ سے زیادہ خرچ کرنا پڑے گا، فری مارکیٹ ہی پاکستان کے مستقبل کا فیصلہ کر سکتی ہے اور خواتین کو بااختیار بنانے کیلئے مزید کام کی ضرورت ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں