The news is by your side.

واٹس ایپ نے 24 لاکھ بھارتی اکاؤنٹس بلاک کردئیے

پیغام رسانی کے لیے استعمال ہونے والی دنیا کی سب سے مقبول ایپلی کیشن واٹس ایپ نے بھارتیوں کو بڑا دھچکا دے ڈالا۔

کمپنی کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا کہ متعدد اکاؤنٹس کو کمپنی کے شکایات چینل سے موصول ہونے شکایات اور آلات کے ذریعے نامناسب سرگرمیوں کی نشان دہی پر بلاک کیا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بلاک کیے گئے اکاؤنٹس میں 14 لاکھ 20 ہزار اکاؤنٹس کو کسی صارف کی جانب سے رپورٹ کیے جانے سے قبل ہی بلاک کیا گیا۔

بیان میں بتایا گیا کہ واٹس ایپ نے ماہِ جولائی میں 23 لاکھ 90 بھارتی اکاؤنٹس بلاک کئے جبکہ کمپنی کو اسی دوران 574 شکایتی رپورٹس موصول ہوئیں تھیں۔

اس سے قبل ماہ جون میں بھی 22 لاکھ 10 بھارتی اکاؤنٹس بلاک کیے گئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں:ٹوئٹر کا بھارتی حکومت کیخلاف مقدمہ

واضح رہے کہ میسجنگ پلیٹ فارم کو بھارت سمیت دنیا بھر میں گمراہ کن معلومات کے پھیلنے کا ذریعہ ہونے کی وجہ سے کڑی تنقید کا سامنا تھا۔

اس سے قبل رواں سال جولائی میں ہی مائیکروبلاگنگ ایپ ٹوئٹر نے بھارتی حکومت کے مواد ہٹانے کے احکامات کو چیلنج کیا تھا۔

ٹوئٹر نے موقف اپنایا تھا کہ بھارتی حکومت کی جانب سے سیاسی جماعتوں کے آفیشل حکام کی جانب سے پوسٹ کیے گئے مواد کو بھی ہٹایا جارہا ہے، اس طرح کی معلومات کو بلاک کرنا پلیٹ فارم کی جانب سے صارفین کو فراہم کردہ آزادی اظہار رائے کی خلاف ورزی ہے۔

ٹوئٹر کا کہنا تھا کہ جس قانون کے تحت پوسٹ کیے گئے مواد کو ہٹایا جارہا ہے اس مواد کا سیکشن 69 اے سے کوئی تعلق نہیں ہے، پلیٹ فارم کھلے پن اور شفافیت پر یقین رکھتا ہے اور ہر ایک کو اپنی رائے کا اظہار کرنے کا حق حاصل ہے

Comments

یہ بھی پڑھیں