The news is by your side.

Advertisement

کورونا وائرس “ڈیلٹا” کا پھیلاؤ : عالمی ادارہ صحت نے خطرے کی گھنٹی بجا دی

جنیوا : عالمی ادارہ صحت “ڈبلیو ایچ او” نے بتایا ہے کہ کورونا وائرس کی سب سے پہلے بھارت میں دریافت ہونے والی قسم ڈیلٹا کے متاثرین کی ایک سو سے زائد ممالک اور خطوں سے اطلاعات ملی ہیں۔

ادارے کی تازہ ترین رپورٹ کے مطابق گزشتہ روز تک 104 ممالک اور خطوں نے وائرس کی ڈیلٹا قسم کی تصدیق کی ہے، یہ تعداد گزشتہ ہفتے کے مقابلے میں7 زائد ہے۔

عالمی ادارہ صحت رواں سال اپریل سے بھارت سے شروع ہونے والی کورونا وائرس کی اس متغیر قسم “ڈیلٹا” کے پھیلاؤ سے متعلق دنیا کو تازہ ترین اطلاعات فراہم کر رہا ہے۔

اطلاعات کے مطابق27اپریل تک بھارت اور امریکہ سمیت کم از کم 17 ممالک نے اس متغیر قسم کے کیسز کی اطلاع دی تھی۔ اس کے بعد مئی کے اواخر تک یہ تعداد 60 ممالک اور خطوں تک جبکہ جون کے اواخر تک 96 تک پہنچ گئی تھی۔

وائرس کی دیگر متغیر اقسام کی منگل تک کی صورتحال یہ ہے کہ سب سے پہلے برطانیہ میں دریافت ہونے والی قسم الفا کی موجودگی کی اطلاع 173 ممالک سے تھی، جو ایک ہفتے قبل کے مقابلے میں ایک کا اضافہ ہے۔

سب سے پہلے جنوبی افریقہ میں دریافت ہونے والی قسم بِیٹا کی تصدیق والے ممالک کی تعداد 3 کے اضافے کے بعد 122 تک، جبکہ پہلی بار برازیل میں پائی جائے والی متغیر قسم گاما کی تصدیق 2 کے اضافے کے بعد 74 ممالک میں ہوئی ہے۔

ڈبلیو ایچ او کی رپورٹ میں وائرس کی متغیر اقسام کی نگرانی بدستور جاری رکھنے پر زور دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ مسلسل دو ہفتوں سے دنیا بھر میں نئے وائرس متاثرین کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں